Code : 4064 12 Hit

آئرن گنبد سسٹم کو امریکہ منتقل کرنے کے لئے طیارہ تل ابیب پہنچ گیا

صہیونی ذرائع نے بتایا ہے کہ دنیا کا سب سے بڑا کارگو طیارہ آئرن گنبد کا نظام ریاستہائے متحدہ امریکہ پہنچانے کے لئے بین گورین ایئرپورٹ پر اترچکا ہے۔

ولایت پورٹل:صہیونیوں کے مطابق ، دنیا کا سب سے بڑا کارگو طیارہ ، انٹونوف اے این 225 ، پیر کو تل ابیب کے بین گوریون ہوائی اڈے پر آئرن گنبد کا نظام ریاستہائے متحدہ امریکہ پہنچانے کے لئے اترا۔
ٹائمز آف اسرائیل اخبار کی رپورٹ کے مطابق صیہونی حکام نے اعلان کیا ہے کہ صہیونیوں کے مطابق ، دنیا کا سب سے بڑا کارگو طیارہ ، انٹونوف اے این 225 ، پیر کو تل ابیب کے بین گوریون ہوائی اڈے پر آئرن گنبد کا نظام ریاستہائے متحدہ امریکہ پہنچانے کے لئے پہنچ چکا ہے، طیارے میں امریکی فوجی ٹرک  ہیں اور آئرن گنبد سسٹم کے کچھ حصے ان ٹرکوں پر لادے جانے ہیں، رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ یہ حصے امریکی فوج کے استعمال کیلئے امریکہ بھیج دے جائیں گے، اس سے قبل ، واشنگٹن کا ارادہ صیہونی حکومت سے یہ نظام خریدنا تھا لیکن سائبر ہیکنگ کے امکان کی وجہ سے آئرن گنبد کو منتقل کرنے کے منصوبہ ترک کر دیا گیا تھا۔
آئرن گنبد کا نظام صیہونی حکومت کے میزائل دفاعی نظاموں میں سے ایک ہے ، جسے 2005 میں رافیل ڈیفنس انڈسٹریز کمپنی نے ڈیزائن اور تیار کیا تھا اور اسے 2011 میں اس حکومت کی فوج میں استعمال کیا گیا تھا، کہا جاتا ہے کہ آئرن گنبد میں میزائلوں اور اڑنے والی اشیاء کے علاوہ چار سے 70 کلومیٹر کے فاصلے پر راکٹ اور مارٹر گولوں اور توپوں کو نشانہ بنانے کی صلاحیت ہے، تاہم  صیہونی حکومت کی مزاحمتی تحریک  کے ساتھ لڑائیوں سے یہ ظاہر ہوا ہے کہ یہ میزائل سسٹم  مزاحمت کی میزائل لہروں کے خلاف مکمل طور پر کمزور اور نازک ثابت ہوا ہے۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین