اربوں ڈالر کا امریکی جدید سسٹم انصاراللہ کے ڈرونز کا مقابلہ کرنے میں ناکام:سعودی چینل

امریکہ جدید نظاموں کی لانچنگ پر لاکھوں ڈالر خرچ کرتا  لیکن وہ کچھ ہزار ڈالر کے جنگی ڈرونز کے مقابلے میں  ناکام ہوجاتا ہے۔

ولایت پورٹل:سعودی عرب کے الحدث ٹیلی ویژن چینل نے امریکی فوجیوں کے خلاف ڈرون حملوں اور امریکی فضائی دفاعی نظام کے مہنگے ہونے کی خبر دیتے ہوئے کہا کہ امریکہ نے میزائلوں اور طیارہ بردار بحری جہازوں سمیت جدید نظاموں کی تعمیر پر اربوں ڈالر خرچ کیے ہیں  لیکن یہ سسٹم چند ہزار ڈالر  کےڈرون  کے خلاف بے معنی اور بے اختیار ہیں، جنگی ڈرونز کی طاقت بیان کرتے ہوئے الحدث چینل کا کہنا ہے کہ ان کی قیمت کم  ہے جبکہ نقصان زیادہ کرتے ہیں اور وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ ان کا خطرہ بڑھتا جارہا ہے  جبکہ بڑے ممالک اور ان کے جدید نظام ایک مسئلہ بن گئے ہیں۔
سعودی چینل نے مزیدکہا ہے کہ امریکہ کو اس بات پر شدید تشویش ہے کہ یہ ڈرونز اس کی مخالف قوتوں کے ہاتھوں نہ لگ جائیں کیونکہ یہ بکتر بند گاڑیوں، فوجی تنصیبات کے ساتھ ساتھ ریفائنریوں اور بندرگاہوں کو بھی نشانہ بنا سکتے ہیں ،الحدث نے مزید کہا ہے کہ ان ڈرونز یا ان کے پارٹز کو آن لائن خریدا جا سکتا ہے اور پھر اسمبل کیا جا سکتا ہے، یہ ڈرون کم اونچائی پر اور آہستہ آہستہ حرکت کرتے ہیں اس لیے یہ تیزی سے سمت بدل سکتے ہیں اور ریڈار عموماً ان کو روکنے سے قاصر ہیں۔
سعودی چینل کا کہنا ہے کہ  اگر یہ  ڈرونز دھماکہ خیز مواد لے کر جا رہےہوں گے تو انہیں زبردستی فضائی حدود سے باہر نکالنا مشکل ہو گا کیونکہ یہ بہت خطرناک ہیں۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین