صیہونی درندوں کے ہاتھوں زخمی ہونے والے فلسطینی نوجوان کی شہادت

غزہ کی پٹی کی سرحد پر واپسی مارچ کے دوران صہیونی عسکریت پسندوں کی فائرنگ سے زخمی  ہونے والا ایک فلسطینی نوجوان شہید ہو گیا ہے۔

ولایت پورٹل:معا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق غزہ پٹی کی سرحد پر تقریبا دو سال قبل واپسی مارچ کے دوران صہیونی عسکریت پسندوں نے فلسطینی نوجوان محمد لبد کو گولی مارکر زخمی کر دیا تھا ۔
 ایم اے نیوز ایجنسی کے مطابق  آخرکار منگل کی رات گولی لگنے سے ہونے والے زخموں کی شدت کی وجہ سے وہ شہید ہوگئے۔
واضح رہے کہ  واپسی مارچ 30 مارچ 2018 سے شروع ہوا تاکہ واپسی کے حق پر زور دیا جائے نیز غزہ کا محاصرہ اور مقبوضہ فلسطین کے ساتھ ساتھ امریکی سفارت خانے کی یروشلم میں نقل مکانی پر غزہ کی سرحد پر احتجاج کیا جائے۔
 اگرچہ فلسطینی مظاہرین نے شروع سے ہی مظاہروں کی پرامن نوعیت پر زور دیا لیکن صہیونی حکومت نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے گولیوں کا استعمال کیا،ان مظاہرین میں صیہونی بربریت کے نتیجہ میں اب تک مظاہروں میں 200 سے زائد فلسطینی شہید اور 21 ہزار سے زائد زخمی ہوئے ہیں۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین