Code : 2788 637 Hit

جنرل سلیمانی کا قتل ہر قانون کے مطابق غیر قانونی تھا: برطانوی لیبر پارٹی کے رہنما

برطانوی لیبر پارٹی کے رہنمانے ایک بیان میں کہا ہے کہ کسی بھی قانون کے ذریعہ میجر جنرل قاسم سلیمانی کے قتل کے لئے واشنگٹن کا اقدام غیر قانونی تھا۔

ولایت پورٹل:اسپوٹنیک نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق برطانوی لیبر پارٹی کے رہنما جیرمی کوربین نے بغداد میں ہوائی اڈے کے قریب واشنگٹن  کے حالیہ دہشت گردانہ حملے کے بارے میں اپنے تازہ ردعمل میں کہا ہے کہ میجر جنرل قاسم سلیمانی کا قتل ہر طرح سے غیر قانونی تھا ،اسکائی نیوز کو دیئے گئے ایک انٹرویو میں ، کوربن نے کہا ہے کہ ، امریکی حکام کے دعووں کے برخلاف ، ایران کی سپاہ پاسداران کے سینئر کمانڈر اور قدس فورس کے سربراہ کا قتل کسی بھی قانون کے تحت غیر قانونی تھا،برطانوی لیبر پارٹی  کے رہنما نے زور دے کرکہا کہ اگر امریکہ  یہ چاہتا ہے کہ دوسرے ممالک بین الاقوامی قانون کی پاسداری کریں تو اسے خود بھی  بین الاقوامی قانون کی خلاف ورزی نہیں کرنا چاہئے،ہاؤس آف کامنس میں گفتگو کرتے ہوئے مذکورہ برطانوی عہدیدار نے واشنگٹن کے ہاتھوں میجر جنرل سلیمانی کے قتل کو "انتہائی خطرناک اور جارحانہ حرکت" قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ اقدام مغربی ایشیاء کو ایک اور جنگ کی طرف لے جاسکتا ہے،انہوں نے جانسن پر برطانوی وزیر دفاع کے پیچھے چھپ جانے کا بھی الزام لگایا تاکہ جنرل قاسم سلیمانی کے قتل سے متعلق سوالات کے جوابات سے گریز کیا جاسکے،مغربی ایشیاء میں امریکی مداخلت کا حوالہ دیتے ہوئے ، کوربین نے اس بات کا اعادہ کیا کہ برطانوی پارلیمنٹ کو ایران کے ساتھ کسی بھی ممکنہ فوجی تصادم میں برطانیہ کو امریکہ کی مدد کرنے سے روکنا چاہئے،جیریمی کوربین نے جنرل سلیمانی کے قتل پر برطانوی ردعمل کو بھی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ مجھے حیرت ہے کہ اگر ایران کسی امریکی جنرل کو قتل کرتا تو کیا برطانوی حکومت  یہی کہتی کہ واشنگٹن  کی ذمہ داری  ہے کہ وہ کشیدگی سے دور رہے۔



0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین