عالمی براردی فلسطینی قیدیوں کی صورتحال کو سنجیدگی سے لے؛فلسطینی قیدیوں کی نگراں کمیٹی کا مطالبہ

فلسطینی قیدیوں کے کلب نے ایک بیان میں "آزادی ٹنل" قیدیوں کی صورتحال معلوم ہونے کی ضرورت پر زور دیا جنہیں جلبوع جیل سے فرار ہونے کے بعد دوبارہ گرفتار کیا گیا ہے۔

ولایت پورٹل:فلسطینی قیدیوں کے کلب نے پیر کی شام اپنے ایک بیان میں  ریڈ کراس بین الاقوامی کمیٹی اور انسانی حقوق کی تمام تنظیموں سے مطالبہ کیا کہ وہ  صیہونی جیل سے فرار ہونے والے قیدیوں  کوصہیونی  فوج کی جانب سے دوبارہ گرفتار کیے  جانے کے بعد ان کی صورتحال کا تعین کرنے کے لیے فوری کارروائی کریں۔
فلسطینی قیدیوں کے کلب نے زور دیا کہ صہیونی حکومت کی  جانب سےزکریا الزبیدی،محمود العارضہ،محمد العارضہ اور یعقوب قادری کے حراستی مراکز کو خفیہ رکھنے اور ان کے وکلا کوان سے ملاقات نہ کرنے دینے  کی پالیسی نیز زکریا الزبیدی کی ہسپتال منتقلی کے بارے میں  ملنے والی خبروں کے بعد ان قیدیوں کی صورتحال کے سلسلہ میں تشویش بڑھ گئی ہے۔
 فلسطینی قیدیوں کے کلب نے اس بات پر زور دیا کہ صہیونی حکومت کی قیدیوں پر تشدد کی ایک طویل تاریخ ہے اور اس کی عدالتیں اپنے عمل کے ذریعے قیدیوں پر تشدد کے وقت اور حدود کو طول دینے میں مدد کر رہی ہیں۔
درایں اثنا عبرانی ذرائع نے پیر کی شام اطلاع دی  کہ فلسطین کے عسکریت پسندوں نے جنین کے شمال میں واقع صیہونی حکومت کی  الجلمہ چوکی پر فائرنگ کی، دریں اثنا فریڈم ٹنل آپریشن کے چار قیدیوں میں سے ایک زکریا الزبیدی کی صورت حال کے بگڑنے کے بعد ، مغربی کنارے کے شہر جنین کے شہریوں نے ہائی الرٹ جاری کیا ہے،فلسطینیوں نے زکریاالزبیدی اور ان کے ساتھیوں جنہیں جلبوع جیل سے فرار ہونے کے بعد دوبارہ گرفتار کیا گیا  ہے نیز  ان تمام قیدیوں جن پر ظلم اور تشدد کیا جا رہا ہے ،کی حمایت میں جنین کیمپ میں مارچ کیا ۔
 فلسطینیوں نے صیہونی حکومت کی مسلسل جارحیت کے مقابلہ میں فلسطینی عوام کے درمیان قومی اتحاد کو مضبوط بنانے پر بھی زور دیا۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین