Code : 3474 21 Hit

بے گھر فلسطینیوں کا افطار

صہیونی حکومت کے ہاتھوں جن فلسطینیوں کے گھر تباہ ہوچکے ہیں وہ اس سال رمضان کے مہینہ بے گھر ہوکر گزر رہے ہیں۔

ولایت پورٹل:اناطولی نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق جہاں دنیا بھر کے بیشتر مسلمان رمضان  المبارک کو اپنے گھروں میں گزارتے ہیں وہیں وہ فلسطینی جن کے گھر اسرائیلی فوج نے تباہ کردیئے ہیں وہ رمضان کا مہینہ بے گھر ہو کر گزاررہے ہیں۔
یاد رہے کہ نومبر 2019 میں  اسرائیلی جنگی طیاروں نے وحشیانہ حملے میں حمودہ ابو عمرہ کے گھر کو تباہ کردیا جس کے بعد یہ فلسطینی گھرانہ بے گھر ہے۔
یہ 17 رکنی فلسطینی کنبے کے لئے یہ پہلا رمضان المبارک ہے  جو اپنے گھر میں   نہیں  بلکہ  ٹن کین اور پلاسٹک کے تھیلوں بنائے گئے ٹینٹ میں گزارنے پر مجبور ہیں۔
گذشتہ روز اسرائیلی فوج نے مغربی کنارے کے شہر کبار میں فلسطینی قیدی قاسم البرغوثی کا گھر تباہ کردیا تھا۔
فلسطینی مزاحمتی تحریک حماس نے صیہونی حکومت کے ہاتھوں فلسطینی مکانات کو تباہ کرنے اور زرعی اراضی پر قبضہ کرنے کے حالیہ اقدامات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ صہیونی جارحیت کی پالیسی مزاحمت میں اضافہ کرے گی۔
صہیونی حکومت نے اعلان کیا ہے کہ وہ مغربی کنارے میں صیہونی بستیوں کو وسعت دینے کا ارادہ رکھتی ہے۔
واضح رہے کہ حالیہ مہینوں میں متعدد فلسطینی زرعی اراضی کو صیہونی فوجیوں نے تباہ کرکے ان  پر قبضہ کر لیا ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین