Code : 4677 11 Hit

آل سعود کا مستقبل تاریک،امریکہ کسی کا نہیں

فلسطینی تحریک فتح کی مرکزی کمیٹی کے ایک ممبر نے کہا ہے کہ صیہونیوں کے ساتھ تعلقات بحال کیے جانے کی لہر پرکچھ عرب ممالک کی خاموشی ان کے اس سمت میں گامزن ہونے کے عزم کو ظاہر کرتی ہے۔

ولایت پورٹل:فلسطینی مزاحمتی تحریک الفتح کی مرکزی کمیٹی کے ممبر عباس ذکی نے المیادین نیوز ایجنسی  کو بتایا کہ صیہونیوں کے ساتھ تعلقات بحال کیے جانے کی لہر پرکچھ عرب ممالک کی خاموشی ان کے اس سمت میں گامزن ہونے کے عزم کو ظاہر کرتی ہے اوریہ تاریخ کے ساتھ غداری ہے۔
انہوں نے مزید کہاکہ سوڈانی عوام اس ملک کے حکمرانوں کو صیہونیوں کے ساتھ ملنے   صیہونیوں کو ان کے اہداف تک پہنچنے کی ہرگزاجازت نہیں دیں گے۔
انھوں نے کہا کہ ایسے رہنما موجود ہیں جو خونی تمغوں کا انتظار کر رہے ہیں نیز جو لوگ ہم پر ناشکری کا الزام لگاتے ہیں وہ ہمیں ان لوگوں کی یاد دلاتے ہیں جنہوں نے فلسطینی عوام کے قتل عام کے لیے لاکھوں خرچ کیے  ہیں، عباس ذکی نے کہاکہ ٹرمپ ایک کے بعد ایک اپنے کرایے داروں کو بے نقاب کررہے ہیں اور امریکی بن سلمان کو میڈل دینے کے خواہاں ہیں ۔
انھوں نے کہا کہ آل سعود کے کردار کو ختم کرنے کی کوششیں ہو رہی ہیں لیکن ہم مایوس نہیں ہوئے ہیں اور حیرت انگیز کام کر کے دکھائیں گے۔
عباس ذکی نے مزید کہاکہ آل سعود اچھی طرح جانتے ہیں  کہ اگر وہ صیہونیوں کو گلے لگانے کی گاڑی پر سوار ہوں گے تو نہ خانہ کعبہ بچے اور نہ ہی مسجد البنی نیز تاریک مسبقل ان کا بھی انتظار کررہا ہے۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین