Code : 3879 6 Hit

سامراج کا زمانہ ختم ہوچکا:فلسطینی اتھارٹی کا صیہونیوں کو انتباہ

فلسطینی اتھارٹی کی وزارت خارجہ نے ایک بیان میں صیہونیوں کےقبضے اور استعمار کا مقابلہ کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے ان تمام لوگوں کا شکریہ ادا کیا جو مغربی کنارے پر قبضے کے منصوبے کو مسترد کرنے میں فلسطین کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں۔

ولایت پورٹل:النشرہ نیوز ایجنسی کی ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق فلسطینی اتھارٹی کی وزارت خارجہ نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے ان تمام ممالک اور بین الاقوامی تنظیموں کا شکریہ ادا کیا ہے جو فلسطینی عوام کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں اور ان کے حقوق کی پاسداری کرتے ہیں،وزارت خارجہ نے ان افراد اور ممالک کومخاطب قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ صیہونی حکومت کے مغربی کنارے پر قبضہ کرنے کے منصوبے کی مخالفت کرنے سے فلسطینیوں کے اندر امید پیدا ہوئی ہے اور آپ کے موقف کی وجہ سے دوسروں کو اسرائیلی حکومت کے جرائم اور "نوآبادیاتی قبضے" نیز سامراج کا مقابلہ کرنے کا موقع ملے گا۔
بیان میں کہا گیا ہے کہ قبضہ اور سامراج کے نصف صدی سے زیادہ عرصے کے بعد ، ہمیں اس نوآبادیاتی منصوبے کو ختم کرنے کے لئے مل کر کام کرنا ہوگا کیونکہ اسرائیل اپنے آپ کو بچانے کے لیے الحاق جیسے منصوبے بنا رہا ہے، اسرائیلی قبضے کا تسلسل ہماری قسمت میں کوئی  تھوڑی لکھا ہے  ،ہم شجاعت، عزم اور محنت سے ان اس غیر قانونی ریاست کے سامراجی  ایجنڈوں کا مقابلہ کر سکتے ہیں، فلسطین کی وزارت خارجہ نے صیہونی حکومت پر مغربی کنارے کے الحاق کے منصوبے پر عمل درآمد روکنے کے لئے مسلسل دباؤ ڈالنے کا مطالبہ کیا  اور یہ بھی کہا کہ اسی کے ساتھ ساتھ صیہونی رہنماؤں بین الاقوامی عدالت میں کھڑا کیا جائے ۔
واضح رہے کہ صہیونی حکومت نے مغربی کنارے پر قبضہ کرنے کے منصوبے کو جولائی کے اوائل میں نافذ کرنے کا منصوبہ بنایا تھا لیکن اس وقت امریکی مدد کی عدم دستیابی سمیت کئی وجوہات کی بنا پر وہ ایسا کرنے سے دستبردار ہوگئے، تازہ ترین خبر کے مطابق امریکہ نے اس منصوبے پر عملدرآمد کو "بلیک اینڈ وائٹ" اتحاد کی منظوری پر مشروط کردیا ہے۔۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین