Code : 2490 43 Hit

سوڈان سے عمر البشیر کی حکومت کا ہمیشہ کے لیے خاتمہ

سوڈان میں عبوری حکومت نے معزول صدر عمر البشیر کی حکومت اور اس سے وابستہ پارٹی کوتحلیل کیے جانے کے لیے قانون پاس کر دیا ہے۔

ولایت پورٹل:روئٹرز نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق سوڈان کی سرکاری ٹیلی ویژن نے خبر دی ہے کہ عبوری حکومت کونسل اور سوڈان کی وزراء کونسل کے مشترکہ اجلاس نے جمعرات کو ایک قانون منظور کیا  ہےجس کا مقصد سابق صدر عمر البشیر کی حکومت کو تحلیل اور معزول کرنا ہے،سوڈان کے عبوری حکومت کے وزیر اعظم  عبد اللہ ہمدوک نے اس فیصلہ پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے  لکھا ہے کہ  پرانی حکومت اور اس کی طاقت کو ختم کرنے کا قانون انتقام نہیں ہے ، بلکہ ان لوگوں کے وقار کو محفوظ رکھنا ہے جوان ڈکٹیٹروں سے تنگ آچکے ہیں جنہوں نے ان کا خون چوسا ہے اور ان کا جینا حرام کر رکھا تھا نیز اقدار ، عزت ، دیانت اور عوام کے حقوق ادا کرنے کے اپنے کسی بھی  عہد پر قائم نہیں رہے تھے،انہوں نے مزید کہا کہ ہم لوگوں نے انصاف کی فراہمی ، لوگوں کے وقار کے احترام اور ان کی کامیابیوں کے تحفظ کے لئے مشترکہ اجلاس میں اس قانون کو اپنایا  تاکہ عوام کی جیب سے لوٹی ہوئی دولت کو بحال کیا جاسکے اس لیے کہ یہ ایسے طاقتور اور انقلابی لوگ ہیں  جو تاریکی کے دروازوں کو توڑ کر نجات کے طلوع فجر کی طرف بڑھے ہیں،سوڈانی اتحاد "آزادی اور تبدیلی" کے رہنما  وجدی صالح نے اپنے فیس بک پیج پر لکھا ہے کہ اس قانون میں نیشنل کانگریس ، اس کے اداروں اور تنظیموں کی تحلیل نیز اس کی تمام علامتوں اور حکومت کا خاتمہ بھی شامل ہے،یاد رہے کہ سوڈانی نیشنل کانگریس پارٹی کو تحلیل کرنے سے متعلق قانون کا مسودہ منگل کو گورننگ کونسل اور سوڈان کی وزراء کونسل نے پیش کیا تھا،قابل ذکر ہے کہ عمر البشیر کے خلاف مظاہروں کا آغاز دسمبر2018 کو ہوا تھا جو تیزی سے پھیلتا چلا گیا اور اس کی وجہ سے گذشہ11 اپریل کو ان کی حکومت کا تختہ الٹ گیا، عمر البشیر خرطوم جیل بھی گئے اور ان پر بدعنوانی کا الزام بھی عائد کیا گیا۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین