Code : 3494 23 Hit

دس لاکھ انسانوں کا قتل عام کرنے والا مجرم 23سال بعد گرفتار

تقریبا ایک ملین روانڈا کے قتل عام کے مرکزی مجرموں میں سے ایک کو کئی سال بعدپیرس کے نواحی علاقوں میں گرفتار کیا گیا ہے۔

ولایت پورٹل:نیویارک ٹائمز کے مطابق روانڈا میں 1994 میں ہونے والی نسل کشی کے مرکزی مجرموں میں سے ایک ، فیلیسین کابوگا کو ہفتے کے روز گرفتار کیا گیا جو جعلی شناخت کے ساتھ فرانس میں مقیم تھا اور ادھر  کئی ہفتوں سے پولیس اس کا پیچھا کررہی تھی۔
اس کی گرفتاری سے اب  اس نسل کشی کو انصاف دلانے میں مدد مل سکتی ہے جس میں 800000 سے 10 لاکھ کے درمیان روانڈینوں کا قتل عام کیا گیا تھا۔
واضح رہے کہ اس کے اعترافات سے قتل عام کے سلسلہ میں مزید بہت سے راز فاش بھی ہوسکتے ہیں۔
قابل ذکر ہے کہ کئی دہائیوں بعد  بھی  اس سانحہ پر تناؤ وسطی افریقہ کو عدم استحکام اور جنگ کی لپیٹ میں لے رہا ہے۔
جیسنٹن بوسنگی نے اس سلسلہ میں  ایک انٹرویو میں کہا کہ یہ گرفتاری کئی طریقوں سے ایک تاریخی واقعہ ہے،آپ فرار ہوسکتے ہیں  لیکن چھپ نہیں سکتے،یہ ہمیشہ نہیں چل پائے گا۔
یادرہے کہ بین الاقوامی فوجداری عدالت نے روانڈا کے سب سے امیر انسانوں میں سے ایک کابوگا کو نسل کشی کا مرکزی کفیل اور سرمایہ کار تسلیم کیا ہے جس پر جرائم کا الزام عائد ہونے کے بعد وہ 23 سال تک مفرور تھا۔
 
 
 

0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम