Code : 3716 7 Hit

بعث کالعدم پارٹی کو عراقی سیاست میں واپس لانے کی امریکی عربی سازش

خلیج فارس کے عرب اور امریکہ بعثی رہنماؤں کو عراقی سیاسی منظر نامے پر واپس لانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

ولایت پورٹل:المعلومہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق عراقی پارلیمانی اتحاد الفتح کے نمائندے محمد البدوی نے  خلیج فارس اور امریکہ میں عربوں کی طرف سے نئی سازشوں کا انتباہ دیتے ہوئے کہا کہ امریکہ کے زیرقیادت اتحاد اور اس کے حامی سیاسی عمل میں مشکوک سودوں کے ذریعے بعث پارٹی کے رہنماؤں کو سیاست میں لانے کی کوشش کر رہے ہیں۔
انہوں نے کہا  کہ اس کارروائی کا مقصد عراق میں سیاسی عمل کے خلاف نرم بغاوت ہے۔
عراقی پارلیمنٹ نمائندہ نے یہ بھی کہا کہ نہ صرف امریکہ بعث کے رہنماؤں کو واپس کرنے کی کوشش کر رہا ہے  بلکہ خلیج عرب کی ریاستیں بھی بعثیوں کو واپس لانے کے منصوبے پر توجہ مرکوز کر رہی ہیں۔
اس سلسلے میں  عراقی منحرف اور کالعدم بعث پارٹی کے ایک رہنما  صلاح المختار نے پچھلے سال ستمبر 2017 کے اوائل میں اعلان کیا تھا کہ اس پارٹی کی امریکہ کے ساتھ بات چیت ہورہی ہے اور کہا  کہ بعث اور امریکہ کے مابین کسی معاہدے کا امکان بھی بعیدنہیں ہے۔
مذکورہ کالعدم پارٹی کے رہنما نے کہا کہ بعث پارٹی مستقبل میں امریکہ کے ساتھ کسی بھی طرح کے مذاکرات کا خیرمقدم کرتی ہے۔
 انہوں نے مزید کہا کہ اگر امریکہ اورروس کے درمیان اختلاف میں اضافہ ہوتا ہے تو واشنگٹن بعث پارٹی کے ساتھ معاہدے پر پہنچ جائے گا۔
اپنے تاثرات کے اختتام پر بعث پارٹی کے رہنما نے دعوی کیا کہ امریکہ 2014 سے یہ نتیجہ اخذ کرچکا ہے کہ عراقی بحران کا کوئی بھی حل بعث پارٹی کی شرکت کے بغیر ناممکن ہے۔
یادرہے کہ امریکہ اور بعث پارٹی کے درمیان اس سے قبل بھی مذاکرات ہوتے رہے  ہیں۔



0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین