برطانوی سیاسی تاریخ کا سب سے بڑا راز فاش

الجزیرہ نے اعلان کیا کہ اس نے برطانوی لیبر پارٹی کے اندرونی تعاملات کے بارے میں 500 گیگا بائٹس معلومات حاصل کی ہیں، جو اس پارٹی اور برطانوی سیاسی ماحول کے بارے میں حقائق کو ظاہر کرتی ہیں۔

ولایت پورٹل:الجزیرہ چینل کی ویب سائٹ نے اعلان کیا کہ چینل کے تفتیشی محکمے(I-Unit) نے برطانوی سیاسی تاریخ کی سب سے بڑی معلومات حاصل کی ہیں جن سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ کس طرح غیر منتخب اور تعینات عہدہ دار اس ملک کی لیبر پارٹی میں جمہوریت کو کمزور کر رہے ہیں۔
الجزیرہ کا کہنا ہے کہ اسے موصول ہونے والے ڈیٹا کی مقدار 500 جی بی ہے اور اس میں 1998 سے 2021 تک لیبر پارٹی کی ای میلز، ویڈیوز اور آڈیو فائلز شامل ہیں،چینل نے دعوی کیا ہے کہ لیک ہونے والے ڈیٹا اور معلومات سے پتہ چلتا ہے کہ کس طرح لیبر پارٹی کے بیوروکریٹس، جن کا کام برائے نام اور رسمی کام پارٹی کے مفادات کو پورا کرنا ہے، نے 2015 سے 2020 تک جیریمی کوربن کے لیے پارٹی اراکین کی حمایت کو کم کرنے کی کوشش کی۔
چینل کا کہنا ہے کہ لیبر پارٹی کی افشا ہونے والی معلومات سے پتہ چلتا ہے کہ پارٹی کے اندر کس قدر عدم اطمینان آہستہ آہستہ اندرونی لڑائیوں کو جنم دے رہا ہے کہ پارٹی کے کس دھڑے کو پارٹی کا کنٹرول سنبھالنا چاہیے، 2015 سے پہلے اور1998 سے 2021 تک لیبر کے اندرونی تنازعات سے متعلق دستاویزات سے پتہ چلتا ہے کہ کس طرح جیریمی کوربن کے لیبر کے کچھ حامیوں کو یہود دشمنی اور ہم جنس پرست مخالف کے الزام میں رکنیت سے اخراج یا معطلی کا سامنا کرنا پڑا۔
الجزیرہ نے کوربن اور ان کے حامیوں کو بدنام کرنے کی کوشش کرنے کی وجہ کے بارے میں لکھا ہے کہ جیریمی کوربن 1980 کی دہائی کے بعد لیبر پارٹی کے پہلے سوشلسٹ رہنما تھے جنہوں نے برطانوی سیاسی نظام کے خلاف عوامی عدم اطمینان کی لہر شروع کی نیز عوامی اور ریاستی ملکیت پر زور دیا نیز برطانوی صنعتوں اور اس وقت کی قدامت پسند حکومت کی پالیسیوں اور کفایت شعاری کے پروگراموں کو ختم کرنے کا مطالبہ کیا۔
جیسا کہ الجزیرہ نے اطلاع دی ہے کہ اس چینل کا تحقیقی شعبہ آنے والے ہفتوں میں لیبر پارٹی کے بارے میں افشا ہونے والی معلومات کی اس مقدار کے بارے میں رپورٹس کا ایک سلسلہ نشر کرے گا۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین