Code : 3872 5 Hit

یمن پر سعودی اتحاد کی بربریت؛کم از کم 10 شہری شہید

سعودی اتحاد کی شمال مغربی یمن میں رہائشی علاقے پر بمباری میں کم از کم 10 یمنی شہری شہید ہوگئے۔

ولایت پورٹل:المسیرہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق یمن کے صوبہ الحجہ میں سعودی اتحاد کے فضائی حملے میں کم از کم 10 یمنی شہری ہلاک ہوگئے ہیں،رپورٹ کے مطابق سعودی-امریکی اتحاد کے جنگجوؤں نے آج سہ پہر شمال مغربی صوبے الحجہ کے وشحہ شہر میں رہائشی علاقہ پر بمباری کی جس کے نتیجہ میں میں کم از کم 10 افرادشہید اور متعدد زخمی ہوگئے،واضح رہے یمن پر سعودی عرب سے امریکہ کی پشت پناہی میں بعض عرب ممالک کے ساتھ مل کر ایک عربی مغربی اتحاد تشکیل دیا ہے جو  مارچ 2015 سے اس غریب عرب ملک کے نہتے عوام کو نشانہ بنا رہا ہے  جس کے نتیجہ میں اب تک ہزاروں بے گناہ یمنی شہید اور  زخمی ہوئے ہیں جن میں ایک بڑی تعداد بچوں اور خواتین کی ہے  یہاں تک کہ اقوام متحدہ کی بچوں کی تنظیم یونیسکو کا کہنا ہے کہ اس وقت پوری دنیا میں بچوں کے لیے سب سے غیر محفوظ جگہ یمن ہے جہاں  جن بچوں کو اسکول میں ہونا چاہیے تھا وہ یا تو دہشتگردوں کے ہاتھوں اغوا ہورہے ہیں یا پھر بھوک کی وجہ سے ہلاک ہورہے
اس کے علاوہ سعودی اتحاد نے یمن کے بنیادی ڈھانچہ کو اس قدر نقصان پہنچایا ہے کہ اس ملک کا طبی نظام بالکل تباہ ہوچکا ہے جس کی وجہ سے عوام کو دنیابھر میں پھیلنے والے کورونا جیسے مہلک مرض کا مقابلہ کرنے میں کافی دشواری پیش آرہی ہے جبکہ سعودی عرب کا دعوی ہے کہ اس نے اس وبا کے پیش نظر یمن میں جنگ بندی لاگو کی ہوئی ہے لیکن عملی میدان میں یہ دعوے کھوکھلے نظر آرہے اور آئے دن اس  اتحاد کے ہاتھوں بے گناہ یمنی عوام موت کے منھ میں جارہے ہیں جبکہ اقوام متحدہ اور عالمی برادری میں مکمل خاموشی اختیار کررکھی ہے ،یہی وجہ ہے یمنی عوام سعودی اتحاد کے ساتھ اقوام متحدہ اور عالمی برادری کو اپنی نسل کشی میں برابر کا شریک سمجھتے ہیں۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین