Code : 3144 72 Hit

سعودی شہزادوں کی گرفتاری شاہ سلمان کی بگڑتی ہوئی حالت سے مربوط ہیں: القدس العربی

بین الاقوامی میڈیا نے دو سعودی شہزادوں کی نظربندی کو سرخ لائن سے عبور قرار دیتے ہوئے کہا کہ ان گرفتاریوں کا تعلق سعودی بادشاہ کی بگڑتی ہوئی حالت سے ہوسکتا ہے۔

ولایت پورٹل:امریکی اخبار وال اسٹریٹ جرنل اور بلومبرگ نیوز نے ہفتے کی صبح کو اطلاع دی ہے کہ سعودی حکام نے شاہ سعود کے بھائی احمد بن عبد العزیز اور سابق ولی عہد شہزادہ محمد بن نائف کو حراست میں لیا ہے۔
القدس العربی  بین الاقوامی اخبار نے ایک رپورٹ میں بتایا ہے کہ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے اپنے چچا احمد بن عبد العزیز کو گرفتار کرکے شاہی خاندان کی سرخ لکیروں کی خلاف ورزی کی ہے۔
مذکورہ اخبار نے ایک اعلی عربی ذریعہ سے نقل کیا ہےکہ یہ گرفتاریاں احتیاطی تدابیر کی بنا پر ہوئی ہیں نیز  ان کا تعلق سعودی بادشاہ کی بگڑتی ہوئی حالت سے ہوسکتا ہے۔
اس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سعودی شہزادوں کے موبائل فون دو دن سے  ضبط ہیں اور باہر کی دنیا سے ان کے تعلقات منقطع ہیں  جس سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ کچھ ہو رہا ہے۔
القدس العربی نے زور دے کر کہاکہ سعودی ولی عہد نے اپنے چچا کو گرفتار کرکے سعودی شاہی خاندان کی روایات کی سنگین خلاف ورزی ہے اس لیے کہ یہ کسی عام شہزادے کا مسئلہ  نہیں ہے  بلکہ یہ آل سعود کے بانی خاندان کے بانی  عبد العزیز کے بیٹے(احمد) کی بات ہے۔
واضح رہے کہ انھیں مراکش سے واپسی کے کچھ دن بعد اسے گرفتار کیا گیا ہے۔
ان گرفتاریوں میں سابق ولی عہد شہزادہ محمد بن نائف اور دیگر شہزادے بھی شامل ہیں نیزشہزادوں کی بیویاں اور بچے بھی گھروں میں نظربند ہیں۔
رپورٹ میں مزیدآیا ہے کہ ان گرفتاریوں سے شہزادوں کے مابین موجودہ ولی عہد شہزادے کے خلاف سازش کا اشارہ ہے۔
القدس العربی نے ایک  واقف ذریعہ کے حوالہ سے لکھا ہے  کہ محمد بن نائف  کوبالکل گوشہ نشین کر دیا گیا ہے ،انھیں اپنا سیل فون یا انٹرنیٹ بھی استعمال کرنے کی اجازت  نہیں ہے اور دارالحکومت  سے دور دراز جدہ یا مکہ کے کسی علاقے میں نظر بند ہیں ۔




1
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम