Code : 3283 35 Hit

سعودی عرب میں ایک بار پھر گرفتاریوں کا بازار گرم

سعودی عرب نے کورونا وائرس کو کچلنے کے لئے عالمی سطح پر پیدا ہونے والی رائے عامہ کا استحصال کرتے ہوئے میڈیا کارکنوں کی گرفتاریوں کی ایک نئی لہر شروع کردی ہے۔

ولایت پورٹل:سعودی عرب کے قیدیوں کے امور کی نگرانی کرنے والے ٹویٹر اکاؤنٹ’’ معتقلی الرأی ‘‘نے لکھا ہے کہ سعودی حکومت نے پوری دنیا کے کورونا بحران  پر قابو پانے کے لیے سرگرم ہونے  کا استحصال کرتے ہوئے گرفتاریوں کی ایک نئی لہر شروع کردی ہے۔
’’ معتقلی الرأی ‘‘نے لکھا  ہے کہ  سعودی حکام نے کورونا بحران کا فائدہ اٹھاتے ہوئے گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران نئی گرفتاریوں کا آغاز کیا ہے۔
مذکورہ اکاؤنٹ نے لکھا کہ میڈیا کارکنوں کی ایک بڑی تعداد کو گرفتار کیا گیا ہے  جس کے بارے میں  آئندہ مزید تفصیلات جاری کی جائیں گی۔
ٹویٹر اکاؤنٹ میں کہا گیا ہے کہ معروف میڈیا کارکن منصور الرقیبہ  نئی گرفتاریوں کے دوران گرفتار ہونے والوں میں شامل ہیں جس کی وجہ ان کے  پرانے ٹویٹس میں اپنے خیال کا اظہار کرنا ہے۔
’’ معتقلی الرأی ‘‘ٹویٹر اکاؤنٹ  نے سعودی عہدیداروں کی جانب سے کورونا بحران کے ناجائز استعمال کی مذمت  کرتے ہوئے اس غنڈہ گردی کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا ہے اوراور اپنے خیالات کے اظہار کے لئے حراست میں لیے جانے والےتمام افراد کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا ہے۔
و
اضح رہے کہ امریکی اخبار وال اسٹریٹ جرنل نے رواں ماہ سعودی عرب میں بڑے پیمانے پر گرفتاریوں کی اطلاع دی تھی خاص طور پر وزارت دفاع اور داخلہ  دونوں وزارتوں کےکچھ اعلی عہدہ داروں نیز کچھ شہزادوں اور افسروں کی گرفتاریوں کا ذکرکیا تھا۔


1
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम