صیہونیوں پر ایران کا خوف و ہراس طاری

صیہونیوں پر ایران کا اس قدر خوف و ہراس طاری ہے کہ صیہونی وزیر خارجہ نے ترکی میں مقیم اپنے شہریوں سے یہ ملک چھوڑنے کو کہا ہے۔

ولایت پورٹل:لوفیگارو اخبار کی رپورٹ کے مطابق قدس کی غاصب اور جابر صہیونی حکومت کے وزیر خارجہ یائیر لاپیڈ نے ایک بیان میں یہ دعوی کیا ہے کہ ایران آنے والے ہفتوں میں استنبول میں مقیم صہیونی شہریوں کے خلاف حملے کرنے کا ارادہ رکھتا ہے لہذا صہیونی شہریوں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ ترکی کے درالحکومت نہ جائیں اور اس شہر سے جلد از جلد نکل جائیں۔
انہوں نے دنیا بھر میں اسرائیل کی ریاستی دہشت گردی کا ذکر کیے بغیر بزعم خود دھمکی دیتے ہوئے کہا کہ جو کوئی بھی اسرائیلیوں کو نقصان پہنچاتا ہے وہ اس کی قیمت ادا کرے گا، وہ جہاں بھی ہو گا ہم اس کا پیچھا کریں گے۔
واضح رہے کہ صیہونی وزیر خارجہ کی دھمکی ایسے وقت میں سامنے آئی ہے جب حالیہ ہفتوں میں فلسطین کے مقبوضہ علاقوں اور خطے کے دیگر ممالک میں ایسے واقعات رونما ہوئے جنہوں نے صیہونی مفادات کو براہ راست نشانہ بنایا اور مغربی و صیہونی میڈیا کی کوششوں کے باوجود اس سے متعلق خبریں لیک ہوئیں جس کے بعد صیہونیوں میں تشویش کی لہر دوڑ گئی اور اسرائیلی حکام دعووں کے باوجود وہ ان واقعات کو روک نہ سکے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین