Code : 3227 25 Hit

صیہونیوں کی کورونا کے بہانے قدس کی تقسیم شروع

غاصب صیہونیوں نے کورونا وائرس کے پھلنے کا بہانہ بنا کر عملی طور پر قدس کو تقسیم کرنا شروع کردیا ہے۔

ولایت پورٹل:سعودی اخبار الشرق الاوسط نے اپنی ایک رپورٹ میں لکھا ہے کہ صیہونی حکام نے فیصلہ کیا ہے کہ کل سے قدس کے محلوں کو مغربی پٹی سے الگ کردیں گے اور ان محلوں میں رفت وآمد کی اجازت نہیں دیں گے۔
رپورٹ کے مطابق صہیونی عہدیداروں نے کورونا وائرس پھیلانے کے بہانے قدس کو مشرقی اور مغربی  حصوں میں تقسیم کرنے کی پالیسی پر عمل کرنا شروع کردیا ہے۔
واضح رہے کہ قدس کی تقسیم کے بارے میں صہیونی حکام کے انکار کے باوجود ، صیہونی پولیس اور  فوج نے اس کو مشرق و مغرب دو حصوں میں تقسیم کردیا ہے۔
مذکورہ اخبار نے اسرائیلی سیاسی ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ صہیونی حکام قدس کے مشرقی اور مغربی حصوں کے مابین  رابطہ کو منقطع کرنےکی کوشش کر رہے ہیں اور  اس کے لیے یہ بہانہ بنا رہے ہیں کہ یہ مشرقی قدس میں کورونا کی صورتحال کو کنٹرول نہیں کیا گیا ہے۔
صہیونی حکام عدالتی کاروائیوں سے بچنے کے لئے کورونا کو بہانے بنا کر غیر معمولی صورتحال کو استعمال کررہے ہیں۔
فلسطینی شہری بھی  مقبوضہ القدس کے متعدد علاقوں میں صہیونیوں کی وسیع پیمانہ پر جانچ پڑتال اور تلاشی سے نالاں ہیں۔
تاہم صیہونی حکام نے فیصلہ کیا ہے کہ کل سے قدس کے محلوں کو مغربی پٹی سے الگ کردیں گے اور ان محلوں میں رفت وآمد کی اجازت نہیں دیں گے۔
یادرہے کہ گذشتہ روز  مشرقی قدس میں واقع وادی الجوز محلے میں  قابض فوجیوں نے نماز پڑھنے کے لیے اپنے گھروں سے نکلنے والے فلسطینی شہریوں پر حملہ کرتے ہوئےفائرنگ کی تھی اور صوتی بم پھینکے۔
ادھر کفرقدوم میں موجود فلسطینی شہریوں نے صیہونی غیر قانونی بستیوں  کی تعمیر کے خلاف ہونے والے مظاہرے کو روکنے سے بھی انکار کردیا۔


1
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम