صیہونی ریاست کو جوہری ہتھیاروں کے عدم پھیلاؤ معاہدے میں شامل ہونا چاہیے:کویت

سعودی عرب کی جانب سے تل ابیب کی جوہری عدم پھیلاؤ کے معاہدے میں شمولیت کی ضرورت پر زور دینے کے بعد کویت نے بھی صیہونی حکومت سے اس معاہدے میں شامل ہونے کا مطالبہ کیا۔

ولایت پورٹل:الخلیج آن لائن نیوز سائٹ کی رپورٹ کے مطابق کویتی وفد کے ایک رکن ابراہیم الدعی نے  جوہری عدم تعاون کی دوسری کمیٹی کے10ویں اجلاس میں خطے میں سلامتی اور استحکام کے قیام کے لیے مشرق وسطیٰ کو جوہری ہتھیاروں سے پاک کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔
رپورٹ کے مطابق جوہری عدم پھیلاؤ کے معاہدے کا جائزہ لینے کے لیے منعقدہ اجلاس میں کویتی عہدیدار نے کہا کہ معاہدے کے ان رکن ممالک کا جن کے پاس جوہری ہتھیار نہیں ہیں، جوہری ہتھیاروں کے عدم پھیلاؤ کے لیے اپنی ذمہ داریوں پر کاربند رہنا اس بات کی علامت ہے کہ یہ ممالک ایٹمی ہتھیاروں کے خطرات پر یقین رکھتے ہیں۔
ابراہیم الدعی نے معاہدے کے رکن ممالک کے اپنے وعدوں پر مسلسل عمل پیرا رہنے کی اہمیت پر زور دیا اور کہا کہ تمام جوہری تنصیبات اور پروگرام بین الاقوامی ایٹمی توانائی ایجنسی کے تحفظات کے تحت ہونے چاہئیں، الدعی نے مزید کہا کہ قابض اسرائیل کو جوہری ہتھیاروں کے عدم پھیلاؤ کے معاہدے میں شامل ہونا چاہئے، خاص طور پر چونکہ وہ واحد غیر رکن فریق ہے جو جوہری ہتھیاروں سے پاک زون کی تشکیل کو روکتا ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین