صہیونی لابی کی تیونس کو صیہونیوں کے ساتھ سمجھوتہ کرنے پر مجبور کرنے کی کوشش

تیونس کی ٹریڈ یونین کے سکریٹری جنرل نے الجزائر کو پریشان کرنے کے مقصد سے تیونس کو تل ابیب کے ساتھ سمجھوتہ کرنے پر مبنی صہیونی لابی کی کوششوں کا اعلان کیا۔

ولایت پورٹل:رائے الیوم اخبار کی رپورٹ کے مطابق تیونس کی ٹریڈ یونین کے سکریٹری جنرل نورالدین الطبوبی نے کہا کہ صہیونی لابی نے تیونس کو صیہونی حکومت کے ساتھ سمجھوتہ کرنے پر مجبور کرنے کی مہم شروع کر رکھی ہے،رپورٹ کے مطابق الطبوبی نے کیروان ٹریڈ یونین کی کانفرنس کے افتتاح کے موقع پر کہا کہ سوشل میڈیا پر صہیونی لابی نے الیکٹرانک روبوٹس اور غیر ملکی انٹیلی جنس سروسز کا استعمال کرتے ہوئے تیونس کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے کے لیے ایک مہم شروع کی ہے تاکہ اس ملک کو اپنے جال میں پھنسایا جاسکے اور الجزائر کا محاصرہ کیا جا سکے۔
واضح رہے کہ الجزائر ان ممالک میں سے ایک ہے جس نے صیہونی حکومت کے ساتھ کسی بھی طرح کے سمجھوتے کی مخالفت کی ہے حتیٰ کہ اس کی افریقی یونین میں رکنیت کی بھی، اس سے قبل تیونس کی وزارت خارجہ نے تیونس اور صیہونی حکومت کے درمیان سمجھوتے کی خبروں پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے ایک بیان جاری کیا تھا۔
تیونس کی وزارت خارجہ نے اپنے بیان میں کہا کہ اس نے صیہونی حکومت کے ساتھ تیونس کے سفارتی مذاکرات کے بارے میں کچھ میڈیا اداروں کی جانب سے شائع ہونے والی خبروں کی واضح طور پر تردید کی ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین