صیہونی فضائی دفاعی نظام میں شامی میزائل روکنے کی صلاحیت نہیں؛صیہونی میڈیا کا اعتراف

شام کے سرکاری ذرائع کی جانب سے صیہونی حکومت کے لڑاکا طیاروں کے حملے کی اطلاع کے بعد صیہونی میڈیا نے انکشاف کیا کہ اس حکومت کا فضائی دفاع شام کی سرزمین سے داغے گئے میزائل کو روکنے سے قاصر ہے۔

ولایت پورٹل:عبرانی زبان کے ذرائع نے آج (بدھ) کو اطلاع دی کہ شام کی سرزمین سے داغا گیا ایک راکٹ مقبوضہ فلسطین کی حدود میں داخل ہواجبکہ شام کے سرکاری ذرائع  نے اعلان کیا کہ آج صبح تقریباً 1:26 بجے، تل ابیب کے لڑاکا طیاروں نے شمال مشرقی بیروت سے الوسطی علاقے کے متعددمقامات کو نشانہ بنایا۔
 صیہونی چینل 12 ٹیلی ویژن نے انکشاف کیا ہے کہ شامی فضائی دفاع نے اس حملے کا جوابی حملہ کیا اور اسرائیلی جنگی طیاروں پر راکٹ داغے، رپورٹ کے مطابق داغے گئے میزائلوں میں سے ایک طیاروے کا تعاقب کرتے ہوئے مقبوضہ فلسطین کی سرزمین میں جا گرا  اور صیہونی حکومت کے دفاعی نظام  کی طرف سے روکے بغیر حیفا کی فضامیں پھٹ گیا۔
ادھر شام کی سرکاری خبر رساں ایجنسی نے آج صبح اطلاع دی ہے کہ اسرائیلی لڑاکا طیاروں کے حملے میں دو افراد شہید اور چھ فوجی زخمی ہوئے ہیں،واضح رہے کہ  یہ خبر شام کے فضائی دفاع کی جانب سے ایک فضائی حملے کا مقابلہ کرنے کے اعلان کے چند گھنٹے بعد سامنے آئی ہے۔
قابل ذکر ہے کہ  صیہونی جنگی طیارے وقتاً فوقتاً لبنان کی فضائی حدود کو استعمال کرتے ہوئے یا مقبوضہ گولان کی پہاڑیوں کے ذریعے مشرقی اور شمال مغربی شام میں اہداف پر میزائل حملے کرتے رہتے ہیں جبکہ لبنان میں مقیم اقوام متحدہ کے امن دستوں نے بارہا اطلاع دی ہے کہ صیہونی حکومت روزانہ کی بنیاد پر اقوام متحدہ کی قراردادوں کی خلاف ورزی کرتی ہے اور لبنان کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کرتی ہے۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین