Code : 2557 48 Hit

نیتن یاہو کی امریکہ سے مورچہ شکن بم لینے کی کوشش

صیہونی وزیر اعظم کوشش کررہے ہیں کہ امریکی صدر کو راضی کرلیں کہ وہ انھیں مورچہ شکن بم فراہم کردیں۔

ولایت پورٹل:المانیٹر کے عبرانی  ورژن  نے اپنی رپورٹ میں لکھا ہے کہ صیہونی وزیر اعظم بنیامن نیتن یاھو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو مورچہ شکن بم دینے پر راضی کرنے کی کوشش کر رہے ہیں،رپورٹ کے مطابق نیتن یاہو مقبوضہ فلسطین کی مختلف جماعتوں کو راضی کررہے ہیں کہ آنے والی  حکومت انھیں  پانچ ماہ کی مہلت دے ،نیتن یاھو کا خیال ہے کہ اس مدت میں امریکی حکومت کو بم فراہم کرنے پر مجبور کیا جاسکتا ہے،نیتن یاھو کے قریبی ذرائع نے المانیٹر کو بتایا کہ امریکی صدر ٹرمپ کے لئے مورچہ شکن بموں کی فراہمی کا اسرائیل کامطالبہ قبول کرنے کا ایک اچھا موقع ہے کیونکہ انہیں انتخاب جیتنے کی اشد ضرورت ہے،المانیٹر نے صیہونی حکومت کے حوالے سے بتایا ہے کہ اب تک  کی  صیہونی حکومتیں  امریکہ  کوان بموں کی فراہمی پر راضی کرنے میں ناکام رہی ہیں،قابل ذکر ہے کہ مورچہ شکن  بم سخت زیر زمین اہداف جیسے بنکرز اور زمین کے اندر ببنائی جانے والی  گہری کنکریٹ کی تنصیبات کو تباہ کرنے کے لئے بنائے گئے ہیں،صہیونی حکومت کا کہنا ہے کہ وہ بموں کی مدد سے ایران کی زیر زمین جوہری تنصیبات کو تباہ کرنے کی صلاحیت کو یقینی بنائے گی،یادرہے کہ یتن یاھو امریکہ کے ساتھ دفاعی معاہدے پر دستخط کرنے کے لئے بھی سخت کوشش کر رہے ہیں،تاہم صہیونی ماہرین نے یہ بھی خبردار کیا ہے کہ ان بموں کے استعمال سے متعلقہ انفراسٹرکچر کی ترقی کے لئے بہت زیادہ  سرمایہ کاری کی ضرورت ہوگی ، جن میں تربیت ، سہولیات ، مکینیکل سسٹم اور ان ہتھیاروں کے استعمال میں ماہرین شامل ہیں۔


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम