Code : 2554 32 Hit

عادل جبیر کون ہوتے ہیں ہمارے فیصلے کرنے والے:یمنی وزیر اطلاعات

یمن کے وزیر اطلاعات نے کل اپنے ایک بیان میں کہا ہے سعودی عرب یمن پر جارحیت میں تلخ شکست سے بچنے کی بھونڈی کوششیں کررہا ہے۔

ولایت پورٹل:المسیرہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق یمنیوں نے سعودی عرب کے وزیر خارجہ عادل الجبیر  کی جانب سے یمن کے سیاسی مستقبل کے بارے دیے جانے والے بیان کو ان کے ملک کے معاملات میں مداخلت قراردیا ہے،سعودی وزیر خارجہ عادل الجبیر نے جمعہ کے روز یمن میں جنگ بندی کے امکان اور انصاراللہ کے اپنے ملک کے مستقبل میں ممکنہ رول کا ذکر کیا،یمنی وزیر اطلاعات ضیف اللہ الشامی نے اپنے ٹویٹر پیج پر عادل الجبیر کے جواب میں لکھاکہ طنز کی  دنیا میں میں الجبیر نامی ایک مخلوق ہے جو گذشتہ پانچ سالوں سے یمنی ہیروز کے ذریعہ بھیکری جانے والی سعودی ہڈیوں کو جوڑنے اور مرمت کرنے کی کوشش کررہا ہے،الشامی نے اپنے ٹویٹ میں مزید لکھا  کہ یمنیوں نے اپنی  ہر چیز کی قربانی  اس لیے نہیں دی کہ الجبیر جیسا شخص انھیں بتائے کہ کیا کرنا اور کیا نہیں کرنا،یمن کی قومی کمیٹی کے ممبر عبدالمالک العجری نے الجبیر کے ریمارکس کے جواب میں کہا کہ یمن کے مستقبل میں انصاراللہ کے کردار کے بارے میں بات کرنا غیر ملکی جماعتوں کا اشتعال انگیز اقدام ہے،انھوں نے کہا کہ یہ ایسے ہی ہے جیسے وہ ہم پر احسان کریں اور ہمیں تحفہ دیں یہ قابل قبول نہیں ہے،الاعجری نے ایک ٹویٹ میں زور دیا کہ غیر ملکیوں کو یہ سمجھ لینا چاہیے  کہ یمنی باشندوں کو اپنے مستقبل اور منزل کا تعین کرنے کا حق حاصل ہے ،قابل ذکر ہے  مذکورہ سعودی نے یہ دعویٰ کیا کہ حوثیوں نے یمن میں س عہدہ دار نے یہ دعویٰ بھی کیا ہے کہ یمن کی جب سعودی عرب نے نہیں بلکہ حوثیوں نے شروع کی ہے اور اب اس بحران کا واحد  حل سیاسی ہے۔

0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम