Code : 2586 47 Hit

امریکہ عراق میں اپنے کسی چیلے کو وزارت عظمیٰ کی کرسی پر دیکھناچاہتا ہے:عراقی پارلیمنٹ ممبر

عراقی الفتح اتحاد کے نمائندے نے عراق کے اندرونی معاملات میں امریکی مداخلت کے نتائج کا انتباہ دیتے ہوئے کہا ہے ہرعراقی کو چاہیے کہ وہ امریکی مداخلت کو مسترد کرے۔

ولایت پورٹل:بغداد الیوم کی رپورٹ کے مطابق ہادی العامری کی سربراہی میں قائم عراقی الفتح اتحاد کے نمائندے کریم علوی نے نئی عراقی حکومت میں امریکی مداخلت کے نتائج کے بارے میں متنبہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ  عراق میں نئی حکومت کے قیام میں مداخلت کرنے کی کوشش کر رہا ہے کیونکہ وہ اپنے منصوبوں پر مبنی حکومت چاہتا ہے،انہوں نے کہا کہ واشنگٹن کا مقصد عراق اور خطے میں اپنے منصوبوں کو عملی جامہ پہنانا ہے لہذا  عراقی عوام خصوصا مظاہرین یہاں تک کہ دینی مرجعیت کو  بھی عراق کے فیصلے میں کسی بھی غیر ملکی مداخلت کو مسترد کرنا چاہیے،علوی  نے یاد دلایا کہ کسی بھی غیر ملکی مداخلت کے نتائج  برےہوتے ہیں لہذا ہر ایک کو امریکی مداخلت کو مسترد کرنا چاہئے اور عراق کا ہر فیصلہ کرنے والے خود عراقی ہونا چاہئے،اس سلسلے میں ، الفتح  اتحاد کے ایک اور  رکن نسیم عبد اللہ نے کہا کہ ملک کی سیاسی جماعتیں وزیر اعظم کے امیدواروں کے ناموں پر متفق ہوچکی ہیں،عبداللہ نے وضاحت کی کہ سیاسی دھڑوں نے عراقی وزیر اعظم کے عہدہ کے  دو امیدوار نامزد کرنے پر اتفاق کیا ہے ،تاہم انھوں  ان دونوں امیدواروں کے نام لینے سے انکار کردیا،بدر پارلیمانی دھڑے کے سربراہ ، حسن شاکر الکعبی نے بھی ، عراقی سیاسی پارٹیوں پر نیا وزیر اعظم منتخب کرنے کے لئے امریکی دباؤ کی بات کرتے ہوئے کہا کہ واشنگٹن  کی طرف سے دباؤ اس لیے ڈالاجا رہا ہے کیونکہ وہ عراق میں ایسے  وزیر اعظم کا انتخاب کرنا چاہتا ہے جس کا رجحان امریکہ کی طرف ہو،شاکر نے اس بات پر زور دیا کہ عراق کے داخلی معاملات ، خاص طور پر کسی وزیراعظم کے انتخاب میں امریکی اوراس کے کسی بھی  اتحادی کی مداخلت  قابل قبول نہیں ہے۔





0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین