Code : 2608 63 Hit

امریکہ عراق میں خانہ جنگی پیدا کرنے کے درپے ہے:عراقی پارلیمنٹ ممبر

عراقی پارلیمانی سکیورٹی کمیٹی کے رکن نے امریکہ کو عراق میں بدامنی پھیلانے کا ذمہ دار قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ عراق میں خانہ جنگی پیدا کرنے کی کوشش میں ہے۔

ولایت پورٹل:عراقی نیوز چینل الاتجاہ کی رپورٹ کے مطابق عراقی پارلیمانی سکیورٹی کمیٹی کے ممبر مہدی تقی نے ملکی  معاملات میں امریکی مداخلت سے خبردار کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے کہا کہ عراق میں سکیورٹی کی صورتحال کو خراب کرنا امریکی کوششوں کا نتیجہ ہے،انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ عراق میں امریکی مداخلت کا مقصد ملک میں خانہ جنگی کا آغاز کرنا ہے،عراقی پارلیمنٹ ممبر نے مزید کہا کہ امریکہ عراق میں انتشار پیدا کر رہا ہے عراقی حکومت عوامی مظاہروں میں مصروف  ہونے سے فائدہ اٹھا رہا ہے ،اس سلسلے میں ، عراقی سیاسی تجزیہ کار صباح العکیلی نے عراقی مظاہروں اور بغداد کے گرین زون پر حملہ کرنے کی کوششوں میں امریکی شکست کی خبر دی ہے،انہوں نے کہا کہ مظاہرین نے تمام امریکی منصوبوں پر پانی پھیردیا  اور امریکی سائبر اور جوکر آرمی  کی طرف سے مظاہرین کو گرین زون  لے جانے اور وہاں کی نفسیاتی جنگ چھڑنے کے باوجود  ایسا نہیں ہوا اور عراقی مظاہرین نے گذشتہ دس نومبر سے امریکیوں کے کہنے پر عمل نہیں کیا،العکیلی نے مزید کہا کہ بغداد میں پرامن مظاہروں کے کوآرڈینیٹرز نے کہا کہ ان کاامریکی سائبر آرمی کی سفارشات سے ان کا کوئی تعلق نہیں ہے اور اس طرح انھوں نے  گرین زون میں منتقل ہونے کے امریکی منصوبوں کو عملی جامہ پہنانے سے روک دیا،انہوں نے یہ کہتے ہوئے کہا کہ ایک طرف واشنگٹن کی جانب سے سکیورٹی فورسز اور الحشد الشعبی اور مظاہرین کے مابین بغاوت کو بھڑکانے کی ناکام کوشش کی گئی اور دوسری طرف مظاہرین کو مشتعل اور سکیورٹی فورسز اور الحشد کو قتل کرنے کا الزام عائد کرکے انہوں نے خانہ جنگی شروع کرنے کی کوشش کی،انھوں نے مزید کہا کہ اب اس بات کا امکان ہے کہ امریکہ عراقی حکومت کے خلاف بغاوت شروع کردے۔



0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम