امریکہ عراق پر پابندیاں عائد کرنے درپے:واشنگٹن پوسٹ

امریکی اخبار نے لکھا ہے کہ ٹرمپ حکومت کے اعلی عہدہ دار عراق کے خلاف پابندیاں عائد کرنے کے لیے مسودہ تیار کررہے ہیں۔

ولایت پورٹل:امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ نے لکھا ہے کہ  عراقی حکومت اور پارلیمنٹ کی جانب سے عراق سے امریکی فوجیوں کونکالنے کے حق میں بل پاس کرنے پر امریکی حکومت خاص طور پر ٹرمپ شدید ناراض ہوئے ہیں جس  کے بعد انھوں نے عراق پر پابندیاں عائد کرنے کا فیصلہ کیا ہے،واشنگٹن پوسٹ نے مزید لکھا ہے کہ عراقی حکومت اور پارلیمنٹ کی جانب سے عراق سے امریکی فوجیوں کونکالنے کے حق میں بل پاس کرنے پر غصہ ہوکر جب سے ٹرمپ نے عراق کو پابندیاں لگانے کی دھمکی دی ہے تب سے امریکی اعلی عہدہ دار اس ملک  کے خلاف پابندیاں عائد کرنے کے لیے مسودہ تیار کرنے جٹے ہوئے ہیں،یادرہے کہ عراقی پارلیمنٹ نے اتوار کی شام ہونے والے امریکی فوجیوں کو عراق سے نکالنے کے منصوبے کی منظوری دے دی،عراقی وزیر اعظم عادل عبد المہدی نے امریکی فوجیوں کے فوری طور پر انخلا کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ "امریکہ اورعراق کا مفاد اسی میں ہے کہ غیر ملکی افواج عراق چھوڑدیں،جس پر غصہ ہوکر امریکی صدر نے کہا ہے کہ اگر عراق چاہتا ہے کہ امریکی فوجیں وہاں سے چلی جائیں اور یہ کام خوش اسلوبی سے نہیں کیا گیا  ہے لہذا ہم ان پر ایسی پابندیاں عائد کریں گے جواب تک انھوں نے خواب میں بھی نہیں دیکھی ہوں گی،ڈونلڈ ٹرمپ نے مزید کہا کہ ہم نے عراق میں ایک بہت ہی قیمتی  ائر بیس تیار کیا ہے جس کی تعمیر کے لئے اربوں ڈالر لاگت آئی ہے ، ہم اسے نہیں چھوڑیں گے، مگر یہ کہ عراق ہمیں اس پر خرچ ہونے والے پیسے دے دے
 


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین