Code : 3000 21 Hit

امریکہ نے ڈیڑھ سال کے اندر عراق سے نکل جانے کا وعدہ کیا ہے:عصایب اہل الحق

عراقی تنظیم عصائب اہل الحق کے سکریٹری جنرل نے کہا ہے کہ امریکہ نے بغداد کو غیر علنی پیغام دیتے ہوئے کہا کہ ڈیڑھ سال کے اندر اس کی تمام فوجیں ملک سے نکل جائیں گی۔

ولایت پورٹل:عراقی تنظیم عصائب اہل الحق کے سکریٹری جنرل  الخز علی نے عراق کے العہد ٹیلی ویژن چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا  کہ  عراق سے اپنی فوجیں واپس بلانے مطالبہ کے جواب میں ، امریکہ نے ایک غیر اعلانیہ  پیغام میں کہا ہے کہ  وہ اپنی افواج ڈیڑھ سال کے اندر واپس بلا لے گا۔
انھوں نے کہا کہ لیکن ہم نے ان کے وعدہ پر یقین نہیں کیا ہے کہ اس لیے کہ امریکہ کی تمام تر پالیسیاں اسرائیل کے مفادات کے تحفظ کے لیے ہوتی ہیں۔
الحز علی نے ایک بار پھر فوری طور پر امریکی فوجوں کے ملک سے نکل جانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ محمد توفیق علاوہ کو کاکابینہ تشکیل دینے کی دعوت اس شرط پر دی گئی تھی کہ وہ ملک سے امریکی فوجوں کو نکالنے کے سلسلہ میں عملی قدم اٹھائیں گے اور یہ ہر عراقی کا مطالبہ ہے۔
یادرہے کہ دو ماہ قبل  امریکی فوجی دہشتگردوں کے ہاتھوں بغداد ائر پورٹ کے نزدیک جنرل قاسم سلیمانی اور ابو مہدی المہندس کی شہادت کے فورا بعد عراقی پارلیمنٹ نے اس ملک سے امریکی فوجوں کے نکل جانے کے لے ایک بل پاس کیا ہے جس کے بعد یہاں امریکہ کی موجودگی کی کوئی قانونی حیثیت نہیں رہتی۔
تاہم امریکہ کو عراق میں وسیع پیمانہ میں جانی اور مالی نقصان ہورہا ہے لیکن پھر بھی وہ اس ملک میں رہنے پر اڑا ہوا ہے۔
عصائب اہل الحق کے سکریٹری جنرل نے اپنے انٹرویو کے دوران مزید کہا کہ  امریکہ کے ساتھ فوجی مقابلہ کرنے کا آپشن اپنی جگہ پر باقی ہے۔




0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین