امریکہ نے ایرانی قوم کی سمجھنے میں غلطی کی ہے:امریکی اخبار کا اعتراف

ایک مغربی ذرائع ابلاغ نے اسلامی جمہوریہ پر زیادہ سے زیادہ دباؤ ڈالنے کی امریکی پالیسی کے بارے میں اطلاع دی ہے کہ وائٹ ہاؤس نے ایرانی عوام کے بارے میں غلطی کی ہے۔

ولایت پورٹل:امریکی اخبار گارڈین  نےاپنے آج کے شمارے میں،ایران کی موجودہ صورتحال اور اسلامی جمہوریہ پر امریکہ اور اس کے اتحادیوں کے دباؤ کا تجزیہ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ تخریب کاریاں ، پابندیاں ، اور ایران کو نقصان پہنچانے کے لیے منصوبے بنانے کا مغرب پر الٹا اثر پڑے گا، تجزیہ کے ایک حصے میں کہا گیا ہے کہ ایران پرڈالنے جانے والے تمام تر دباؤ کے باوجود تہران نے عراق ، شام اور لبنان میں اپنی پالیسیوں میں کوئی تبدیلی نہیں کی ہے اور نہ ہی اس نے اپنے میزائل اور جوہری پروگراموں کو روکاہے۔
تجزیہ کے ایک اور حصے میں  ایران کے خلاف زیادہ سے زیادہ دباؤ کی امریکی پالیسی کا حوالہ دیتے ہوئے لکھا ہے اسلامی جمہوریہ پر زیادہ سے زیادہ دباؤ کا حتمی مقصد ایران میں زندگی کو اتنا مشکل بنانا ہے کہ ایرانی حکومت مذکرات کرنے پر مجبور ہو جائے یا  پھرداخلی احتجاج کے نتیجے میں حکومت کا تختہ الٹ جائے لیکن یہ ایک ناکام پالیسی ہے کیونکہ زیادہ تر ایرانیوں کو  اگرچہ مسائل کا سامنا کرنا پڑ رہاہے لیکن اگر ایران پر حملہ ہوتا ہے  تو یہی لوگ اپنے ملک کو کی حفاظت کرنے اور اپنے وطن کا دفاع کرنے کے اپنی ترجیحات میں رکھیں گے،واضح رہے کہ یہ قوم اس وقت پیچھے نہیں ہٹی اور اپنے وطن کی ایک مٹھی خاک بھی کسی کے قبضہ میں نہیں جانے دی جب یہاں رونما ہونے والا اسلامی انقلاب ابھی گھٹنیوں چلنے کے قابل بھی نہیں تھا جبکہ دوسری طرف سامنے تو صدام جیسا آمرتھا لیکن اس کےپیچھےاس وقت کی تمام تر عالمی طاقتیں آہنی دیوار کی طرح کھڑی تھیں اور لمحہ بہ لمحہ ہر طرح کی امداد کررہی تھیں لیکن ایرانی قوم نے اپنی ایمانی قوت اور جذبے کے ساتھ لڑ کر سب کو دھول چٹا دی۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین