Code : 3604 10 Hit

امریکہ کی 125ایرانی تیل برادار جہازوں پر پابندی عائد

امریکی وزارت خزانہ نے ایران کے عوام کے خلاف اپنے تازہ ترین دہشت گردانہ اقدام کے تحت اسلامی جمہوریہ ایران کے ایک سو پچیس بحری جہازوں اور تیل ٹینکروں کو پابندیوں کو فہرست میں شامل کر دیا ہے۔

ولایت پورٹل:امریکا کی وزارت خزانہ نے وینزوئیلا کے عوام کے لیے ایندھن ارسال کرنے کی ایران کی کامیاب مہم کے انتقام کے طور پر اس ملک کے متعدد بحری جہازوں پر پابندی عائد کر دی ہے۔
امریکی وزارت خزانہ نے ایران کے عوام کے خلاف اپنے تازہ ترین دہشت گردانہ اقدام کے تحت اسلامی جمہوریہ ایران کے ایک سو پچیس بحری جہازوں اور تیل ٹینکروں کو پابندیوں کو فہرست میں شامل کر دیا ہے۔
 امریکی وزارت خزانہ کے غیر ملکی اثاثہ جات کے کنٹرول کے آفس نے پیر کے روز اس فہرست کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان جہازوں اور تیل ٹینکروں پر اس لیے پابندی عائد کی گئي ہے کہ یہ ایٹمی ہتھیاروں کے پھیلاؤ پر پابندی اور اسی طرح ایران کے خلاف امریکا کی جامع پابندیوں کے زمرے میں آتے ہیں۔
امریکا کی جانب سے ایران کے خلاف یہ اقدام ایسے عالم میں کیا گيا ہے کہ جب اسلامی جمہوریہ ایران نے امریکا کی غیر قانونی اور یکطرفہ پابندیوں کو خاطر میں نہ لاتے ہوئے کروڑوں لیٹر پیٹرول کے ساتھ اپنے پانچ آئل ٹینکر وینزوئیلا بھیجے تھے۔
 اس طرح ایران نے وینیزوئیلا کے خلاف بھی امریکا کی دہشت گردانہ پابندیوں  کو ناکام بنا دیا۔
 اقوام متحدہ، غیروابستہ تحریک، روس اور چین نے متعدد بار امریکا کی یکطرفہ پابندیوں کو غیر قانونی بتایا ہے۔
سحر

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین