اقوام متحدہ کی امن فوج بھی صیہونیوں سے پریشان

جنوبی لبنان میں تعینات اقوام متحدہ کی امن فوج UNIFILکے ترجمان نے منگل کی رات کہا کہ اسرائیل ہر روز لبنان کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کرتا ہے اور یہ مسئلہ اس ملک میں ہمارے اقدامات میں خلل ڈالتا ہے نیز کشیدگی میں اضافے کا باعث بنتا ہے۔

ولایت پورٹل:جنوبی لبنان میں تعنیات اقوام متحدہ کی امن فوج UNIFILکے ترجمان آندرے ٹینیٹی نے کہا ہے کہ الغجر گاؤں میں صیہونی حکومت کی خلاف ورزیاں بدستور جاری ہیں جو اس حکومت کے قبضے میں ہے، UNIFIL فورسز کے ترجمان نے اس بات پر زور دیا کہ اسرائیل کو الغجر گاؤں کے شمالی علاقے سے نکل جانا چاہیے، انہوں نے جنوبی لبنان میں اقوام متحدہ کی امن فوج کے اختیارات اور اقدامات میں کسی قسم کی تبدیلی کے وجود سے بھی انکار کیا۔
 لبنان میں تعینات UNIFIL کے ترجمان نے مزید کہا کہ 2006 سے ہم لبنانی فوج کے ساتھ مل کر فیلڈ کام کر رہے ہیں اور یہ سلسلہ آگے بھی جاری رہے گا، ٹینٹی نے مزید کہا کہ ہم لبنانی فوج کی موجودگی کے بغیر بھی کچھ مشن انجام دیتے ہیں جو کوئی نیا مسئلہ نہیں ہے اور 2006 سے موجود ہے۔
واضح رہے کہ سلامتی کونسل نے اپنی قرارداد 2591 میں پہلی بار UNIFIL سے کہا کہ وہ لبنانی مسلح افواج کی مدد کے لیے خوراک، ایندھن اور ادویات کے ساتھ ساتھ 6 ماہ کی مدت کے لیے لاجسٹک اسپورٹ جیسے عارضی اور خصوصی اقدامات انجام دے


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین