امریکہ نے اپنا تسلط برقرار رکھنے کے لیے تائیوان کا سہارا لیا ہے:چینی سفیر

ماسکو میں چین کے سفیر کا کہنا ہے کہ امریکہ سرد جنگ کے دور کی سیاست کا عادی ہونے کی وجہ سے دنیا کو اپنی بالادستی کے بغیر قبول کرنے کو تیار نہیں۔

ولایت پورٹل:اسپوٹنک نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق ماسکو میں چینی سفیر نے امریکہ سے کہا کہ وہ اپنی بالادستی برقرار رکھنے کی کوششیں بند کرے،اسپوٹنک کو انٹرویو دیتے ہوئے چینی سفیر نے کہا کہ امریکہ کو بیدار ہو کر اپنی عالمی بالادستی کو برقرار رکھنے کی کوششیں بند کر دینی چاہیے، جس میں روز بروز تیزی سے کمی آ رہی ہے۔
چینی اعلیٰ سفارت کار نے اس بات پر زور دیا کہ امریکہ اب بھی سرد جنگ کی ذہنیت کا شکار ہے،لیکن اب وقت آگیا ہے کہ وہ جاگے اور دنیا میں اپنی بالادستی کو برقرار رکھنے کی اپنی فضول کوششوں کو بند کریں،ہانہوئی نے مزید کہا کہ امریکہ اس سلسلے میں کسی بھی قسم کے ہتھیار استعمال کرنے سے نہیں ہچکچاتا اور چین کو محدود کرنے کے لیے تائیوان کے مسئلے کا سہارا لینے کی کوشش کر رہا ہے۔
چین کے سینئر سفارت کار نے واشنگٹن کے حالیہ اقدامات کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ یہ متحد چین اصول کی خلاف ورزی اور آبنائے تائیوان میں کشیدگی پیدا کرنے کی مثال ہے،انہوں نے مزید کہا کہ امریکی ایوان نمائندگان کی اسپیکر نینسی پیلوسی کے تائیوان کے دورے سے امریکہ اور چین کے تعلقات کو شدید دھچکا لگا ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین