امریکہ نے حرم امام رضا علیہ السلام پر پابندی عائد کرکے اسلام کی توہین ہے:حزب اللہ

حزب اللہ نے ہفتے کے روزدو علیحدہ بیانات جاری کرتے ہوئے آستان قدس رضوی اورشامی وزیر خارجہ پرپابندی عائد کرنے کے امریکی اور یورپی یونین کے اقدام کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

ولایت پورٹل:المنار چینل کی کے مطابق حزب اللہ نے ایران اور شام کے خلاف حالیہ امریکی اور یورپی یونین کی پابندیوں کے بارے میں دو الگ الگ بیانات جاری کیے، ان بیانات میں ، حزب اللہ نے آستان قدس رضوی پر پابندی عائد  کرنے کی امریکی کارروائی اور شامی وزیر خارجہ پر پابندی  عائدکرنے میں یورپی یونین کی کارروائی کی شدید مذمت کی، رپورٹ کے مطابق حزب اللہ نے آستان قدس رضوی  پرپابندی عائد  کیے جانے سے متعلق ایک بیان میں کہا ہےکہ ایسا لگتا ہے کہ موجودہ امریکی صدارت کا خاتمہ قریب آتے ہی امریکی محکمہ خارجہ کا جنون بڑھتا چلا جا رہاہے۔
بیان میں کہا گیا ہے کہ امریکی پابندیوں کی فہرست میں آستان قدس رضوی اور اس کے معتمد شیخ احمد مروی کا نام شامل کرنا ایک انتہا پسندانہ اقدام ہے، چونکہ آستان قدس رضوی لاکھوں مسلمانوں کے لئے ایک مقدس عبادت گاہ اور پناہ گاہ ہے  لہذا امریکہ کا یہ اقدام اسلام کی توہین ہے، حزب اللہ نے اپنے بیان میں کہا کہ امریکی اقدام اس کے حکمرانوں کی اخلاقی اور فکری زوال کی عکاسی کرتا ہے، ایک اور بیان میں حزب اللہ نے شام کے وزیر خارجہ فیصل المقداد پر یورپی یونین کےجانب سے پابندیاں عائد کیے جانے کے اقدام کی بھی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ  یورپی یونین  نے شام کے وزیر خارجہ فیصل المقداد پر پابندیاں عائد کرکے شام کے خلاف ایک اور دشمنانہ فیصلہ لیا ہے جس سے یورپ کی دہشگردی کے خلاف ڈھونگ رچانے کی پول کھل کر سامنے آتی ہے کیونکہ یہ داعشی سرغنوں پر پابندیاں عائد کرنے کے بجائے ان کے خلاف لڑنے والے ملک شام ہی اپنی ظالمانہ پابندیوں کا شکار بنارہے ہیں۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین