اقوام متحدہ نے امریکہ کو کھلی چھوٹ دے رکھی ہے:روس

روسی وزارت خارجہ کے ترجمان نے امریکہ کی جانب سے اقوام متحدہ کے چارٹر کی خلاف ورزی کرنے پر اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کی خاموشی کو تنقید کا نشانہ بنایا۔

ولایت پورٹل:روئٹرز نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق روسی وزارت خارجہ نے اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل پر الزام لگایا ہے کہ وہ نیویارک میں اقوام متحدہ کے صدر دفتر روانہ ہونے کے خواہشمند روسی عہدیداروں کو امریکہ کی جانب سے  ویزا جاری کرنے سے روکنے پر خاموشی  سے تماشا دیکھ رہے ہیں،روسی وزارت دفاع کی ترجمان ماریا زاخارووا نے بدھ کے روز کہا ہے کہ وزارت دفاع کے کچھ عہدہ دار جو اقوام متحدہ کے صدر دفتر جانے کا ارادہ کر رہے ہیں ،ان کو امریکی ویزا آنے میں مہینوں انتظار کرنا پڑ رہا ہے،ماسکو کا کہنا ہے کہ واشنگٹن نے روسی حکام کو جان بوجھ کر ویزا جاری کرنا ملتوی کردیا ہے ، امریکی حکام کے  اس اقدام سے دوطرفہ تعلقات کو مزید نقصان پہنچ سکتا ہے،ماریہ زاخارووا نے اس سلسلہ میں مزید کہا کہ تعجب اس بات پر ہے کہ یہ سب اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انتونیو گٹیرس کی جانب سے امریکہ کے ذریعہ اقوام متحدہ کے چارٹر کی خلاف ورزیوں کو نظرانداز کرنے کی وجہ سے  ہو رہا ہے ،یادرہے کہ روس نے ستمبر میں بھی  اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں شرکت کے خواہاں روسی وفد کے لئے امریکی ویزا جاری نہ کیے جانے  پر احتجاج کرتے ہوئے ایک سینئر امریکی سفارتکار کو وزارت خارجہ طلب کیا تھا،واضح رہے کہ حالیہ برسوں میں ماسکو پر واشنگٹن کی طرف سے وسیع پیمانے پر پابندیوں اور واشنگٹن کی طرف سے اٹھائے جانے والے مبینہ امور ، جیسے یوکرین اور کریمین جزیرہ یا امریکی انتخابات میں روس کی  مداخلت جیسے الزاما ت کی وجہ سے دونوں ممالک کے درمیان  تعلقات کشیدہ چل رہے ہیں۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین