Code : 3215 27 Hit

شامی فوج ادلب میں کارروائی شروع کرنے کا انتظار کر رہی ہے: شامی عہدیدار

ادلب کے نائب گورنر نے صوبے میں شامی فوج کی کارروائیوں کو دوبارہ شروع کرنے کی تیاری کا ذکر کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ ماسکو معاہدے پر عمل درآمد صرف فوجی کاروائیوں سے ہی ہوگا۔

ولایت پورٹل:شامی اخبار الوطن  کی رپورٹ کے مطابق ادلب کے نائب گورنر محمد فادی السعدون نے اس بات پر زور دیا کہ ایم 4کے نام سے جانی جانے والی  لازقیہ حلب بین الاقوامی  روڈ کے دوبارہ کھولنے کا کام شامی فوج اور روسی معاونت کے ذریعہ فوجی کارروائیوں کے ذریعے کیا جائے گا۔
السعدون کا کہنا  ہے کہ ترکی اور اس کی سرپرستی میں سرگرم دہشت گرد ماسکو معاہدے پر عمل درآمد نہیں کریں گے جس طرح انہوں نے ماضی میں کیا ہے۔
انہوں نے الوطن کو بتایا کہ ترکی ماسکو معاہدے پر عمل درآمد ناکام بنانے میں ملوث ہے یا نہیں ، اس کے بارے میں دو امکانات ہیں: پہلا یہ کہ ترک حکومت دہشت گرد گروہوں کو بالواسطہ اس میں ملوث کرے گی یا  یہ کہ ترکی دہشت گردوں کا حامی ہونے کے باوجود اس معاہدے کو نافذ کرے گا،لہذا اس کو اس معاہدے کو فوجی کارروائیوں کے ذریعہ نافذ کرنے کے لئے  شامی فوج کو کام سونپنا ہوگا۔
شامی عہدیدار نے مزید کہا ایسی معتبر اطلاعات ہیں کہ دہشت گردوں خصوصا النصرہ فرنٹ نے بڑی تعداد میں باشندوں کو اس بین الاقوامی راستے پر گشت روکنے اور معاہدے پر عمل درآمد روکنے پر مجبور کیا ہے۔
یادرہے کہ رواں ماہ میں ماسکو میں ترکی اور روس کے صدور کے درمیان بات چیت کے بعد ادلب میں جنگی اقدامات روکنے کے بارے میں ایک معاہدہ طے پایا ہے جس کے تحت کشیدگی کم کرنے اور علاقے کی نگرانی کے لئے ادلب کی قریبی بستیوں میں مشترکہ گشت کرنے کا منصوبہ بنایا گیا تھا تاہم دہشت گرد عناصر نے ایسا نہیں کرنے دیا۔






1
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین