سعودی اتحاد کا نام بچوں کے قاتلوں کی فہرست میں شامل ہونا چاہئے:یمن

یمنی وزارت خارجہ کے ایک عہدیدار نے یمن میں سعودی اتحاد کے جرائم کے باعث اس ملک کے بچوں کی صورتحال کی طرف اشارہ کرتے ہوےئ کہا کہ اس جارح اتحاد کا نام اقوام متحدہ کی طرف جاری ہونے والی بچوں کے قاتلوں کی فہرست میں شامل ہونا چاہئے۔

ولایت پورٹل:المسیرہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق  یمنی قومی نجات حکومت کی وزارت خارجہ کے عہدیدار نے بتایا کہ حال ہی میں دنیا نے یوم اطفال کا عالمی دن کی مناسب سے جشن منایا ہے جبکہ یمنی بچوں پر دہشتگردی کا نشانہ بنایا جارہا ہے اور ان کو ہلاک  کیا جارہا ہے۔
انہوں نے مزید کہاکہ یمنی بچے روزانہ اپنے مکانات اور اسکولوں کی تباہی دیکھ رہے ہیں اور صحت اور تعلیم کے میدان میں بنیادی حقوق سے محروم ہیں۔
یمنی عہدیدار نے یہ بھی کہا کہ اقوام متحدہ کی اطلاعات کے مطابق  12 ملین اور 200 ہزار یمنی بچوں کو انسانی امداد کی ضرورت ہیں جبکہ 5 سال سے کم عمرکے 5 ملین سے زائد بچے غذائی قلت کا شکار ہیں۔
انہوں نے مزیدکہا کہ  سعودی اتحاد کی جارحیت کی وجہ سے 3790 بچوں کی موت ہوچکی ہےلہذا ہم چاہتے ہیں کہ سعودی اتحاد کا نام اقوام متحدہ کی طرف سے جاری ہونے والی بچوں کے قاتلوں کی فہرست میں شامل کیا جائے، یمنی عہدیدار نے کہا کہ اگر اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل یمن میں سعودی اتحاد کے جرائم میں شریک نہیں ہونا چاہتے ہیں تو انہیں اس اتحاد کا نام بچوں کے قاتلوں کی فہرست میں شامل کر دینا چاہئے۔
قابل ذکر ہے کہ کچھ ماہ قبل اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل نے سعودی اتحاد کو اقوام متحدہ کی بلیک لسٹ سے خارج کردیا تھاجبکہ حالیہ برسوں میں  سعودی عرب نے متعدد بار یمنی بچوں کو ان کے رہائشی شہروں پر بمباری کرکے ہلاک کیا ہے۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین