Code : 3863 9 Hit

اقوام متحدہ کی خاموشی کے باعث سعودی اتحاد یمنی ماہی گیروں کی کشتیوں پر بھی بمباری کرتا ہے: الحدیدہ کے گورنر

الحدیدہ کے گورنر نے اعلان کیا کہ حملہ آور سعودی اتحاد اقوام متحدہ کی خاموشی کے سائے میں یمنی ماہی گیروں کی کشتیوں پر بھی بمباری کر رہا ہے۔

ولایت پورٹل:المسیرہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق ، یمن  کے صوبہ الحدیدہ کے گورنر ، محمد ایاش قحیم نے بتایا کہ سعودی جارح اتحاد نے الصلیف کے علاقے میں کشتیوں پر بمباری کی جبکہ انھیں معلوم تھا کہ یہ  عام شہری اور ماہی گیروں کی کشتیاں ہیں،انہوں نے مزید کہا کہ یمنی ماہی گیروں کی کشتیوں کو نشانہ بنانے کا جرم کرنے کی ان میں اس لیے ہمت ہورہی ہے کہ کیوں کہ  اقوام متحدہ نے ان کے جرائم پر  مکمل خاموشی اختیار کرکے انھیں کھلی چھوٹ دے رکھی ہے ۔
قحیم نے کہا کہ سویڈش معاہدے پر دستخط ہونے کے بعد سے سعودی اتحاد کی جارحیت کے بارے میں اقوام متحدہ کی خاموشی اس  اتحاد کو اپنے جرائم جاری رکھنے کے لئے ہری جھنڈی دکھانا ہے، انہوں نے متنبہ کیاکہ یمن کے خلاف سعودی اتحاد کے جرائم اگر ایسے ہی جاری رہے تو اس کے نتائج کافی برے ثابت ہوں گےنیز یمنی عوام کا صبر طویل نہیں ہوگا، قبل ازیں یمنی مسلح افواج کے ترجمان یحییٰ سریع نے بھی کہا تھا کہ یمنی ماہی گیروں کی کشتیوں پر سعودی اتحاد کے حملے ایک واضح جارحیت ہیں جس کا مقصد یمنی بحری محاصرہ پر پردہ ڈالنا ہے۔
انہوں نے متنبہ کیا کہ یمنی فوجیں ان جرائم سے لاتعلق نہیں رہیں گی اور سعودی عرب کے دل میں تیر ماریں گے جیسا کہ اس سے پہلے بھی ہو اہے اور صرف ایک حملے میں اس ملک کی سب سے بڑی تیل کمپنی اور سعودی اقتصاد میں ریڑھ کی ہڈی کا کام کرنے والے آرامکو تیل کمپنی پر انصار اللہ کے ایک حملہ نے آل سعود کو ناکوں چنے چبوا دیے اور سعودی تیل کی برآمدات کچھ ہی گھنٹوں میں تیس فیصد کم ہو گئیں۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین