جارح سعودی اتحاد کے ہاتھوں 24 گھنٹوں کے دوران یمن میں 137 بار الحدیدہ جنگ بندی کی خلاف ورزی

سعودی جارحیت پسند اتحاد نے گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 137 بار الحدیدہ جنگ بندی کی خلاف ورزی کی ہے۔

ولایت پورٹل:المسیرہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق  سعودی جارحیت پسند اتحاد یمن میں الحدیدہ جنگ بندی کی خلاف ورزی جاری رکھے ہوئے ہے، رپورٹ کے مطابق ، سعودی اتحاد نے گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 137 بار الحدیدہ جنگ بندی کی خلاف ورزی کی ہے،ادھر سعودی لڑاکا طیاروں نے بیک وقت یمن کے دیگر علاقوں کو بھی نشانہ بنایا۔
واضح رہے کہ اسٹاک ہوم معاہدے پر دستخط ہونے کے بعد سے ، جس میں الحدیدہ میں جنگ بندی کی ضرورت پر زور دیا گیا ہے ، سعودی جارحیت پسند اتحاد نے اس معاہدے کی ذرا بھی پابندی نہیں کی ہےاورعالمی برادری نےبھی اب تک اسٹاک ہوم معاہدے کی بار بار خلاف ورزیوں پر سعودی عرب کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی ہے۔
عالمی برادری سعودی عرب کے خلاف کوئی کاروائی کر بھی کیسے سکتی ہے اس لیے کہ اگر وہ اس کی جارحیت کے خلاف ایک لفظ بھی بولیں گے تو اسی دن سے سعودی ڈالر ملنا بند ہوجائیں گے جیسا کہ حال ہی میں اقوام متحدہ نے سعودی عرب کا نام بچوں کے حقوق کو پامال کرنے والے ممالک کی فہرست سے نکال کر یہ ثابت کر دیا ہے کہ ہمارے فیصلے ڈالروں کی بنیاد پر ہوتے ہیں ،ہمیں ظالموں کے خلاف اور مظلوموں کی حمایت میں بولنا نہیں آتا ہے۔
یہی وجہ ہے کہ یمنی عوام سعودی عرب کے ساتھ اقوام متحدہ سمیت پوری عالمی برادری کو اپنے اوپر ہونے والے مظالم میں برابر کا شریک سمجھتے ہیں لیکن اس کے باوجود مٹھی بھر نہتے یمنیوں نے یمن پر جارحیت کے دوران سعودی عرب کو ناکوں چنے چبوا دیے ہیں اور صرف ایک میزائل حملہ میں اس ملک کی سب سے بڑی تیل کمپنی آرامکو کی تیس فیصد برآمدات کو تباہ کر دیا۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین