Code : 4360 2 Hit

فلسطینیوں کو موقع سے فائدہ اٹھاکر اسرائیل سے بات کرنا چاہیے:امارات

متحدہ عرب امارات کے وزیر خارجہ نے اس بات کا اعادہ کیا کہ صہیونیوں کے ساتھ سمجھوتہ فلسطینیوں کے مفاد میں ہے اور انہیں جلد سے جلدصیہونی حکومت کے ساتھ بات چیت کرنا چاہئے۔

ولایت پورٹل:العربیہ چینل کی رپورٹ کے مطابق متحدہ عرب امارات کے وزیر خارجہ عبد اللہ بن زائد نے ایک بار پھر صیہونی حکومت کے ساتھ سمجھوتے کو خطے میں ترقی کے لئے تاریخی اقدام قرار دیا۔
انھوں نے سمجھوتے کو خطے کی اقوام کی خواہش قرار دینے کی کوشش کرتے ہوئے بحرین کی طرف سے اسی طرح کی کارروائی کو درپیش خطرات سے نمٹنے کا ایک موقع قرار دیا اور دعویٰ کیا کہ صہیونی حکومت کے ساتھ معاہدے سے تنازعات اور خطے میں استحکام اور سلامتی پر قابو پانے کے لئے اقوام عالم کی خواہش ظاہر ہوتی ہے۔
عبداللہ بن زید نے مزید کہاکہ خطے میں امن جلد ہی ان طاقتوں پر غلبہ حاصل کرلے گا جو خطے میں تنازعات کے خواہاں ہیں اور شکست کھا چکے ہیں اور کچھ انتہا پسند غیر عرب ممالک ایسی سلطنتیں قائم کرنے کے خواہاں ہیں جو اس خطے میں تنازعات کو بڑھا وا دیتی ہیں۔
انہوں نے کہا کہ معاشرے کی ترقی اور خطے میں استحکام قائم کرنے کو متحدہ عرب امارات کی حکومت کی ترجیحات میں قرار دیااور فلسطینی رہنماؤں کو مخاطب کرتے ہوئے دعوی کیا کہ  ہمارے اس سمجھوتہ سے فلسطینی ریاست کے قیام کی راہ ہموار ہوگئی ہے۔
متحدہ عرب امارات کے وزیر خارجہ نے اس بات کا اعادہ کیا کہ متحدہ عرب امارات اور اسرائیلی حکومت کے مابین ہونے والے معاہدے نےاسرائیل کے مغربی کنارے کے ایک تہائی حصے پر قبضے کے منصوبے کو روک دیا ہےجبکہ صہیونی عہدیداروں کی طرف سے اس مسئلے کو بار بار مسترد کیا گیا ہے اور انہوں نے اعلان کیا ہے کہ انہوں نے اس منصوبے پر عملدرآمد صرف کچھ مدت کے لیےملتوی کردیا ہے۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین