Code : 3188 45 Hit

ترکی اور سعوی عرب کے درمیان کورونائی لڑائی جاری

کورونا وائرس کے پھیلاؤ پر انقرہ کے خلاف ریاض کی جانب سے الزام تراشی کا سلسلہ بدستور جاری ہے۔

ولایت پورٹل:سعودی اخبارالریاض  نے ترک حکومت پر الزام لگایا ہے کہ وہ کورونا وائرس کے  متعلق خبروں کو چھپا رہی ہے اور اس وبا کو روکنے کے لئے مناسب اقدامات کرنے میں ناکام رہی ہے۔
الریاض نے آج کیا ترکی کورونا وائرس کوچھپاتا ہے؟ کی سرخی کے ساتھ ایک رپورٹ شائع کی ہے۔
یادرہے کہ تقریبا دس دن پہلے ، سعودی عرب اور ترکی کے مابین کورونائی جنگ کا آغازاس وقت ہوا جب اپنے آپ کو سعودی مسلح افواج کے سربراہ کہلوانے والے  زید العمری نامی شخص  نے دعوی کیا تھا کہ ترکی سعودی عرب میں کورونا وائرس پھیلانے کا منصوبہ بنا رہا ہے۔
انہوں نےاپنے ٹویٹراکاؤنٹ پر شائع کی گئی ایک ویڈیو میں کہا کہ ترک صدر رجب طیب اردگان سعودی عرب میں سیاحت کے ذریعے کورونا وائرس پھیلانے کی کوشش کر رہے ہیں اور ترکی میں کورونا وائرس کے بارے میں واضح آگاہی نہ ہونے کا مقصد عرب سیاحوں کو نشانہ بنانا ہےتاکہ عرب سیاح خاص طور پر سعودی سیاح اس  وائرس کو اپنے ساتھ لے کر اپنے ممالک جائیں۔
اگرچہ العمری  کے اس تبصرے نے سوشل میڈیا صارفین میں طنز کی لہر دوڑادی ہے تاہم  سعودی روزنامہ الریاض نے آج اپنی رپورٹ میں لکھا ہےکہ ترکی اب بھی نئے کورونا وائرس" کوویڈ - 19 "کے اعدادوشمار کو پوشیدہ رکھ رہا ہے۔
یہاں پریہ حیرت کی بات ہے کہ ترکی ، جو سالانہ 50 ملین سیاحوں کی میزبانی کرتا ہے ، نے اس وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے کوئی احتیاطی اقدامات نہیں کیے ہیں ، اور ترک ایئرلائن استنبول کو مستحکم اسٹیشن کے طور پر استعمال کرنے کے علاوہ طویل سفر کے لیےٹرانزٹ اسٹیشن کے طور پر بھی استعمال کررہی ہےجہاں سے دنیا کے مختلف ممالک کے دسیوں ہزار مسافر ادھر اھر جاررہے ہیں جبکہ ترکی کے لگ بھگ تمام پڑوسی ممالک کورونا وائرس سے متاثر ہو چکے ہیں۔
 

1
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम