ایرانی فوج نے ہتھیاروں کے بجائے اپنے طبی آلات کا مظاہرہ کیا:رائٹرز

ایران نے یوم فوج کی تقریب میں ہتھیاروں کے بجائے اپنے طبی آلات کا مظاہرہ کیا ہے۔

ولایت پورٹل:روئٹرز نیوز ایجنسی نے ایران میں یوم آرمی کی تقریب کے بارے میں اپنی ایک رپورٹ میں لکھا ہے ایران میں یومِ آرمی کی تقریبات کورونا وائرس کے پھیلاؤ سے نمٹنے میں فوج کے کردار کا منظر پیش کررہی تھیں۔
روئٹرز کے مطابق ایران میں یوم آرمی کی تقریبات میں عام طور پر  میزائل ، آبدوزیں ، اور بکتر بند گاڑیاں دکھائی جاتی ہیں لیکن اس سال ماسک پہنے ہوئے  کمانڈروں نے مائیکرو ڈس انفیکشن گاڑیاں ، موبائل ہسپتال اور دیگر طبی سامان کا معاینہ کیا۔
روئٹرز نے مزید لکھا  کہ اسلامی جمہوریہ ایران کی فوج کے کمانڈر انچیف  عبدالرحیم موسوی نے کورونا وائرس سے برسر پیکار ایک ہزار ایک سو سے زیادہ آرمی طبی اہلکاروں کا شکریہ ادا کیا ۔
رپورٹ کے مطابق ایرانی صدر حسن روحانی نے سرکاری میڈیا پر ایک بیان میں کہا ، "صحت اور سماجی پروٹوکول کی وجہ سے ، فوجیوں کی پریڈ کا انعقاد ممکن نہیں ہے۔
روحانی نے مزید کہا کہ اس وقت ہمارا دشمن چھپا ہوا ہےاور ڈاکٹر اور نرسیں میدان جنگ میں سب سے آگے ہیں۔
روئٹرز کے مطابق ایران کو مشرق وسطی کے ممالک میں سب سے زیادہ کورونا وائرس کا سامنا کرنا پڑا ہے۔
واضح رہے کہ ایران میں جمعرات تک ، 4869 افراداس وائرس کی وجہ سے ہلاک ہو چکے تھے  اور ملک کے نائب وزیر صحت ایراج ہریرچی کا کہنا ہے خزان کے موسم میں کورونا وائرس دوبارہ نمودار ہوسکتا ہے۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین