Code : 2923 37 Hit

صدی ڈیل ایک چوری ہے:امریکی پارلیمنٹ ممبر

امریکی ایوان نمائندگان کی مسلم رکن نے امریکی صدر کے مسلط کردہ صدی ڈیل کے منصوبے کی نقاب کشائی پر ردعمل کا اظہار کیا ہے۔

ولایت پورٹل:امریکی ایوان نمائندگان کی  مسلم  رکن ایلهان عمر نے ٹرمپ کے مسلط کردہ صدی ڈیل کے منصوبے کی نقاب کشائی پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر لکھا ہے کہ یہ کوئی امن منصوبہ نہیں ہے بلکہ یہ فلسطین کی شناخت ختم کرنے کی سازش ہے۔
امریکہ کے کنیکٹیکٹ  صوبہ سے تعلق رکھنے والے ڈیموکریٹک پارٹی کے سینیٹر کرس مرفی نے بھی صدی ڈیل  کی نقاب کشائی پر ایک  ٹویٹ میں   کہا ہے  کہ اس منصوبہ سے متعلق اسرائیلیوں کے علاوہ کسی کے ساتھ کوئی بات چیت نہیں ہوئی، لہذا اسے کبھی بھی امن منصوبہ نہیں کہا جاسکتا۔
انھوں نے مزید کہا کہ اسرائیل اور فلسطینی عوام کے مابین معاہدے کے ذریعے ہی امن حاصل ہوسکتا ہے۔
مرفی  کا کہنا ہے ان نئی شرائط کے ساتھ  اسرائیل کے ساتھ مفاہمت کی صورت میں  بعد میں مزید مشکل ہوجائے گی۔
یادرہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے صہیونی وزیر اعظم بنیامن نیتن یاہو کی موجودگی میں کل "صدی ڈیل کے منصوبے کی نقاب کشائی کردی۔
اگرچہ اس سے قبل ہی انہوں نے قدس شہر کو صیہونی حکومت کا دارالحکومت تسلیم کیا اور امریکی سفارتخانہ تل ابیب سے قدس  میں منتقل کردیا تھا۔
ٹرمپ نے اعلان کیا کہ فلسطین کا شہر قدس صہیونی حکومت کا متفقہ دارالحکومت رہے گا۔
انہوں نے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ اسلامی ریاستیں 1948 میں تشکیل پانے والی اسرائیلی حکومت کو تسلیم کرلیں۔





0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین