Code : 1578 24 Hit

تہران میں برطانوی سفیر کی ایرانی وزارت خارجہ میں طلبی

تہران میں تعینات برطانوی سفیر کو اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ میں طلب کرکے امریکہ کی اندھی تقلید کرنے پر برطانیہ سے شدید احتجاج کیا گیا ہے۔

ولایت پورٹل:اسلامی جمہوریہ ایران نے برطانیہ کی جانب سے سمندری تیل بردار جہازوں پر حملے کے الزامات پر برطانوی سفیر کو دفتر خارجہ طلب کرکے اپنا احتجاج ریکارڈ کرایا،بحیرہ عمان میں دو تیل بردار بحری جہازوں پر مشکوک حملے کے بعد برطانوی وزیرخارجہ نے ایران مخالف امریکی الزامات کو دہراتے ہوئے من گھڑت بیانات کا اظہار کیا جس کے فوری ردعمل میں تہران میں برطانوی سفیر کو طلب کیا گیا،ایرانی وزیرخارجہ کے معاون خصوصی اور ڈائریکٹر جنرل برائے یورپی امورمحمود بریمانی نے برطانوی الزامات اور موقف کو یکسر مسترد کرتے ہوئے کہا کہ لندن حکومت بغیر کسی ثبوت کے امریکی نقش قدم پر چل رہی ہے،محمود بریمانی نے اس موقع پر مزید کہا کہ برطانیہ کو ایسے بے بنیاد الزامات کا جواب دینا ہوگا اور اسے چاہئے کہ امریکی الزامات کو دہرانے کے بجائے ایران کی اصولی پالیسی پر غور کرے.برطانوی سفیر نے اس موقع پر کہا کہ وہ ایرانی احتجاج کو جلد اپنے ملک کے حکام تک پہنچائیں گے،واضح رہے کہ امریکی وزیر خارجہ نے جمعرات کو بغیر کسی ثبوت اور دستاویز کے ایران پربحیرہ عمان میں دو تیل بردار بحری جہازوں پر حملے کا الزام عائد کیا تھا۔
سحر


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम