Code : 3120 9 Hit

سعودی عرب کے ساتھ بات چیت بند ہوگئی ہے لیکن ہم پر امید ہیں: قطر

قطر کے وزیر خارجہ نے کہا کہ سعودی عرب کے ساتھ بات چیت بند ہوگئی ہے لیکن قطر پر امید ہے۔

ولایت پورٹل:قطر کے وزیر خارجہ محمد بن عبد الرحمن آل ثانی نے پیر کے روز سی این این کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا ہے کہ سعودی عرب کے ساتھ ہونے والی بات چیت رک گئی ہےلیکن قطر ابھی بھی اس بحران کے حل کے لئے پر امید ہے۔
قطر کے وزیرخارجہ نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ قطر نے بحران کے باجودخلیجی ریاستوں کے ساتھ بات چیت اور مشاورت کا خیرمقدم کیا ہےاور اپن موقف واضح کیا ہے لیکن یہ اسی وقت ممکن ہے  جب بین الاقوامی قانون اور خودمختاری کے احترام کی بنیاد پر گفتگو کی جائے۔
قطری وزیر نے گذشتہ دو ماہ کے دوران سعودی قطری مذاکرات کے لئےمتعدد  چینلز بنائے جانے  کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ بدقسمتی سے  اس سے کچھ حاصل نہیں ہوا اور یہ عمل روک دیا گیا۔
انہوں نے کہا کہ ہم خطےکا مستقبل  زیادہ خوشحال اور مستحکم دیکھنا چاہتے ہیں لیکن  ایسا کسی کے  راستے میں  بلا وجہ روڑے اٹکانے سے نہیں ہونے والا ہے۔
قطری وزیر خارجہ نے خلیجی ریاستوں میں بحران کا ذکر کرتے ہوئےوضاحت کی کہ اس مسئلہ کا حل تمام فریقوں کے مابین سمجھوتہ اور بحران کو حل کرنے کی کوشش کے ذریعے حاصل ہوگا۔
محمد بن عبد الرحمن نے خلیجی ریاستوں کے درمیان جاری  بحران کے حل کرنے موقع کو  کو ایک تاریخی موقع قرار دیتے ہوئے خلیج فارس تعاون کونسل  کے رکن ممالک کے درمیان مفاہمت کی ضرورت پر زور دیا۔
یادرہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے خطہ کے پہلے دورے کے کچھ ہی دن بعد 5 جون2017 کو سعودی عرب ، متحدہ عرب امارات ، مصر اور بحرین نے قطر کے ساتھ سفارتی تعلقات منقطع کردیئے  جو آج تک بحال نہی ہوسکے۔
 
 


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम