طالبان قیدیوں کو جلد رہا کیا جائے گا:افغان صدر

افغانستان کے صدر اشرف غنی نےطالبان کے ساتھ مذکرات کار کمیٹی کے تشکیل دیے جانے کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ طالبان قیدیوں کو جلد رہا کیا جائے گا۔

ولایت پورٹل:افغانستان کے صدر اشرف غنی نے اپنے دوسرے صدارتی دورے کی حلف برداری کی تقریب  میں تقریر کرتے ہوئے کہا کہ سب یہ جان لیں  کہ کسی ایک قوم  یا مذہب کے ماننے والوں پر ہونے والا ہونے والا حالیہ حملہ پوری افغانی قوم پر حملہ ہے ،س کی مکمل تحقیقات کی جائیں گی۔
انہوں نے مزید کہاکہ آج کی یہ  منتخب حکومت افغانستان کے تمام لوگوں کے لئے قانون کی حکمرانی پر مبنی ہوگی  اور نئی افغان حکومت نہ صرف سرکاری ٹیم ہوگی  بلکہ  اس میں تمام لوگوں اور جماعتوں کی شراکت  ہوگی۔
افغانستان کے صدر نے مزید کہا کہ  آج سب کو یہ جان لینا چاہئے کہ یہ حکومت تمام لوگوں کی ہے اب علیحدگی اور ذوق کےدن گذر چکے ہیں، آج کا دن اتحاد اور یکجہتی کا دن ہے  اور ہمارے لئے اپنی قوم کے مستقبل اور سکون کے بارے میں سوچنے کا دن ہے۔
غنی نے اپنی تقریر میں کہاکہ جو چیز لوگوں کو متحد کرتی ہے وہ صلح اور امن ہے اور ہمیں افغانستان کے عوام کو سکون سے لطف اندوز کرنے کے لئے پوری کوشش کرنی چاہئے۔
انہوں نے کہاکہ طالبان کے ساتھ مذاکراتی ٹیم کو کل تک حتمی شکل دے دی جائے گی۔
غنی کا کہنا تھا کہ مذاکرات کرنے والی ٹیم کو عوام کے مختلف طبقات کے نمائندوں سے وسیع مشاورت کے بعد حتمی شکل دی گئی ہے۔
افغان صدر نے اپنی تقریر کے دوسرے حصہ میں جہاں فائرنگ اور دھماکوں کی آوازیں بھی آرہی تھیں ، اس بات پر زور دیا کہ  جلد ہی طالبان قیدیوں کی رہائی کا مینڈیٹ جاری کیا جائے گا۔




0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین