Code : 3490 33 Hit

سید حسن نصراللہ واحد عرب رہنما ہیں جن کی تقریر کو لکھوں افراد سنتے ہیں:رای الیوم

ایک عرب زبان ذرائع ابلاغ نے خطہ کی موجودہ صورتحال کے پیش نظر حزب اللہ کے سکریٹری جنرل کی کل رات کی تقریر کو اورعرب دنیا کے لاکھوں افراد کی جانب سےاس گفتگو کا مطالعہ کرنے امریکہ اور صیہونیوں کے لیے ذلت کا باعث قرار دیا ہے۔

ولایت پورٹل:انٹرریجنل اخبار رای الیوم نے اپنی ایک رپورٹ میں لکھا ہے کہ  سید حسن نصراللہ کی کل کی تقریر کی طرف اشارہ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ حزب اللہ کے سکریٹری جنرل سید حسن نصراللہ کی تقریر کو لاکھوں عرب  عوام سنتے ہیں کیوں کہ وہ واحد عرب رہنما ہیں جو عرب قوم کے مسائل اور خدشات سے پریشان ہوتے ہیں اور ان کا تذکرہ کرتے ہیں خاص طور پر فلسطین  کے مسئلہ میں ، اس کے علاہ وہ واحد عرب لیڈر ہیں جوامریکہ ،اسرائیل اور  ان کے غلام عرب رہنماؤں کےمنصبوں کو بے نقاب کرتے ہیں۔
رای الیوم نے لکھاکہ یہ تقریر ، جو مزاحمت کی ثقافت کی طاقت اور اس کی قدر و جڑ اور اس کے عرب اور اسلامی اصولوں پر عمل پیرا ہونے کی گہرائی کو ظاہر کرتی ہے،حزب اللہ کے ایک اعلی آپریشنل کمانڈر کی برسی اور فلسطین کے یوم سیاہ  کی بہترویں برسی  کہ جس میں ایک کروڑ سے زائد فلسطینی بے گھر ہوئے تھے ،سے صرف دودن قبل  اور وہ بھی ایسے وقت میں جب متعدد عرب ممالک  خاص طور پر سعودی عرب میں اسرائیل کے ساتھ تعلقات کو بحال کرنے کے لیے ٹی وی پر سیرئل اور ڈرامے نشر کیے جارہے ہیں،کی گئی ہے۔
مذکورہ اخبار نے لکھا ہے کہ سید حسن نصر اللہ نے جب یہ کہا کہ اسرائیلی شام کی میزائل مصنوعات پر حملے کررہے ہیں جس سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ وہ شام اور اس کے اتحادیوں کواپنے وجود کے لیے خطرہ سمجھ رہے ہیں ،انھوں نے اس بات سے صیہونی کی دکھتی رگ پر ہاتھ رکھ دیا ہے۔
 

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین