Code : 3849 5 Hit

ٹرمپ کی اہلیہ کے آبائی شہر میں ان کا مجسمہ نذر آتش

میلانیا ٹرمپ کے مجسمے کو ان کے آبائی شہر میں نامعلوم افراد نے نذر آتش کردیا۔

ولایت پورٹل:روئٹرز خبر رساں ادارےکی رپورٹ کے مطابق  امریکی صدر کی اہلیہ  میلانیا ٹرمپ کے لکڑی کے مجسمے کو چار جولائی (امریکی یوم آزادی کے موقع پر) ان کے آبائی شہر سلووینیا میں جلایا گیا،اس مجسمے کو بنانے والے برطانیہ میں مقیم ایک امریکی فنکار بریڈ ڈن نے کہا کہ پولیس کے اعلان کے بعد ، میں نے لکڑی کے مجسمے کو ہٹا دیا ، جو کالا اور مسخ ہوچکا تھا۔
یادرہے کہ اس قبل بھی جنوری میں موراوش کے شہر موروس میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا لکڑی کا ایک بڑا مجسمہ جلایا گیا تھا،تاہم ابھی تک یہ معلوم نہیں ہوسکا ہے کہ یہ اقدام کس نے کیا ہے لیکن امریکہ اور ٹرمپ کی پالیسیوں کے کچھ بائیں بازو مخالفین نے ماضی میں بھی ایسے ہی اقدامات اٹھائے ہیں۔
قابل ذکر ہے کہ اس  وقت امریکہ میں تقریبا دو مہینے سے ا س ملک میں جاری نسل پرستی کے خلاف مظاہرے ہورہے جہاں  نسل  پرستی کی علامت سمجھے جانے والے مجسمے توڑنا اور ان کو گرانا روز کا معمول بن چکا ہے یہاں تک  مظاہرین نے امریکہ کو کشف کرنے والے کولمبس کو بھی نہیں بخشا اور ان کا مجسمہ بھی نیچے گرادیا،اگرچہ ٹرمپ نے مجسمے گرانے والوں کو دہشت گرد قرار دیتے ہوئے ان کو دس قید کی سزا دینے کا اعلان کیا ہے جس کے بعد پولیس نے عوام کے خلاف مزید بربریت شروع کر دی ہے اور گرفتاریوں کا بازار گرم کر دیا ہے لیکن ایسا لگتا ہے مظاہرین پر اس حکم کا کوئی اثر نہیں ہوا ہے  اس لیے کولمبس اور ملانیا ٹرمپ کے مجسموں کو گرانے اور جلانے کا اقدام ٹرمپ کے اس حکم کے بعد کیا گیا ہےنیز یہ سلسلہ ابھی بھی جاری ہے۔




0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین