Code : 2420 44 Hit

امریکہ کا ٹویٹر کےکچھ سابق ملازمین پر سعودی عرب کے لئے جاسوسی کا الزام

امریکہ کے اٹارنی جنرل نے ٹوئٹر کے کچھ سابق ملازمین پر الزام عائد کیا ہےکہ وہ صارفین کی معلومات چوری کرکے سعودی حکام کے لیے جاسوسی کر رہے تھے۔

ولایت پورٹل:واشنگٹن پوسٹ کی رپورٹ کے مطابق دو ن پہلے امریکی شہری احمد ابو یا مو نامی ٹویٹر کے سابق ملازم کو گرفتار کیا گیا تھا جس کے  بعد امریکی اٹارنی جنرل   اٹارنی جنرل نے  ان سمیت مزید ٹوئیٹر کے دو سابق ملازمین پر سعودی عرب سب کے لئے جاسوسی کا الزام عائد کیا ہے،اٹارنی جنرل کا کہنا ہے کہ احمد ابویا ایک ایسے صارف کے اکاؤنٹ کی سعودی حکام کے لیے جاسوسی کررہے تھے جو سعودی حکام کی ملک کے اندر سرگرمیوں پر گفتگو کرتے ہیں،ابو یامو پر یہ الزام کی عائد کیا گیا ہے کہ انھوں نے جعلی دستاویزات بنا کر امریکہ کی فیڈرل پولیس کی آنکھوں میں دھول جھونکی ہے،دوسر نام سعودی شہری علی الزبارہ کا  ہے جو ٹویٹر کے چھ ہزار صارفین کی نجی معلوم چوری کر کے  سعودی  حکام تک پہنچاتے تھے،تیسرا نام  احمد المطیری کا ہے جن کے بارے اٹارنی جنرل کا کہنا ہے کہ یہ سعودی حکام اور ٹویٹر ملازمین کے درمیان رابطہ کا کام کرتے تھے اور جاسوسی کرتے تھے، رپورٹ میں آیا ہے کہ الزبارہ اور المطیری اس وقت سعودی عرب میں  مقیم ہیں،قابل ہے کہ ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ پہلی بار ہے کہ امریکی اٹارنی جنرل کسی سعودی شہری پر جاسوسی کا الزام عائد کررہے ہیں۔

0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम