Code : 2573 42 Hit

سعودی حکام جھوٹ اور فریب کے عادی ہوچکے ہیں:یمنی سیاسی کونسل

یمنی سیاسی کونسل کا کہنا ہے کہ سعودی اتحاد کے رکن ممالک جھوٹ ،دھوکہ بازی اور فریب کے ذریعہ ایسی صلح کے خواہاں ہیں جس سے ان کی سلامتی اور استحکام برقرا ہوسکے۔

ولایت پورٹل:المسیرہ نیوز چینل کی رپورٹ کے مطابق یمن کی سپریم پولیٹیکل کونسل کے سربراہ کے مشیر ، عبد اللہ حجر نے ریاض کی جنگ روکنے پر آمادگی پر تردید کا اظہار کیا،انھوں نے کہا کہ سعودی امریکی اتحاد اپنے امن و استحکام کو برقرار رکھنے کے لئے صلح کے خواہاں ہیں ، لیکن ہم اس طرح کی صلح کو قبول نہیں کریں گے جب تک کہ وہ یمن کے استحکام کی ضمانت نہیں دیتے،حجر نےیمن کے خلاف جنگ روکنے میں سعودی عرب کے سنجیدہ نہ ہونے کا حوالہ دیتے ہوئے ، اس بات پر زور دیاکہ سعودی حکام دھوکہ دہی کی پالیسی کے عادی ہوچکے ہیں،یمن کی سپریم پولیٹیکل کونسل کےمذکورہ عہدیدار نے صنعا امن اقدام کو یمن کے خلاف ہونے والی جھڑپوں اور محاصرے کو روکنے کے بارے میں واضح قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اگر سعودی اتحاد نے امن اقدام کو قبول نہیں کیا تو وہ ہماری طرف سے حملے جاری رہیں گے،یاد رہے کہ اس سے قبل عمان کے وزیر خارجہ یوسف بن علوی نے کہا تھا کہ صنعا کی طرح سعودی عرب بھی یمن میں تنازعہ کے خاتمے کے لئے بات چیت میں سنجیدہ ہے،اناطولیہ نیوز ایجنسی نے بھی حال ہی میں ایک سیاسی ذریعے کے حوالے سے بتایا ہے کہ عمان سعودی عرب کے ولی عہد محمد بن سلمان اور محمد عبد السلام کی سربراہی میں انصار اللہ کے وفد کی ملاقات کے لیے تیاری کر رہا ہے،واضح رہے کہ سعودی عرب کے زیرقیادت عربی اتحاد نے عبد المنصور ہادی کی حکومت کے جواز کو بحال کرنے کے بہانے اپریل 2010 سے یمن کے خلاف وسیع پیمانے پر کارروائی کا آغاز کیا ہےجس کے نتیجے میں سعودی اتحاد کو  جانی اور مالی نقصان کے علاوہ اب تک کچھ بھی حاسل نہیں ہوا ہے۔

0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम