Code : 2651 22 Hit

سعودی اتحاد کے ہاتھوں یمنی تیل بردار جہاز ضبط

سعودی اتحاد نے یمنی باشندوں کے نظام زندگی کو درہم برہم کرنےکے لئے دسیوں ہزار ٹن پٹرول اور ڈیزل لے جانے والے جہازوں پر قبضہ کر رکھا ہے۔

ولایت پورٹل:المسیرہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابقیمن کی تیل کمپنی نے اعلان کیا ہے کہ یمن کے سات تیل  بردار جہازوں کو  ضبط  کررکھا ہے جن میں 180ہزار ٹن پٹرول اور ڈیزل ہے،یمنی تیل کمپنی کی طرف سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ  سعودی اتحاد نے تیل بردار جہازوں پراپنی جارحیت جاری رکھی ہوئی ہے تاکہ  اس کے ذریعہ عام شہریوں کی سختیوں اور مصائب میں اضافہ ہوسکے،رپورٹ کے مطابق جن جہازوں کو ضبط کیا گیا ہے  ان کے پاس الحدیدہ کی بندرگاہ میں داخل ہونے کے لیے لازمی اجازت نامے موجود ہیں،یادرہے کہ سعودی عرب امریکہ اور صیہونی حکومت کے تعاون سے ایک اتحاد تشکیل دے رکھا ہے جس کے تحت وسیع فضائی حملے کیے جاتے ہیں نیز پانچ سالوں سے یمن کے  مختلف شہروں میں خوراک ، ادویات اور عوام کی دیگر ضروریات کو روک رکھا ہے،قابل ذکر ہے کہ سعودی اتحاد نے اب تک   کئی بار یمن کے تیل برداراور بحری جہازوں سمندر  میں ہی روک رکھا ہے اور انھیں الحدیدہ کی بندرگاہ پر پٹرولیم مصنوعات کو اتارنے کی اجازت نہیں دے رہا  ہے  جبکہ اس اتحاد کا یہ اقدام بین الاقوامی قوانین ، معاہدوں، ضابطوں اور انسان دوست اصولوں کے منافی ہے،واضح رہے کہ یمن کی وزارت صحت کے ترجمان یوسف الحاضری نے رواں سال اکتوبر میں اعلان کیا تھا کہ اگر اتحادی فوج نے ایندھن کے جہازوں تک رسائی کو روکنا جاری رکھا تو نجی طبی مراکز کو صحت کی تباہی کا سامنا کرنا پڑے گا لیکن سعودی  عرب ٹس سے مس نہیں ہوا کیوں کہ اس کو معلوم ہے کہ امریکہ اور اسرائیل اس کی پشپناہی کررہے ہیں  اور بین الاقوامی برادری بھی خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے۔


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम