Code : 3011 37 Hit

سعودی عرب کے سب سے چھوٹے سیاسی قیدی کو آٹھ سال قید کی سزا

سعودی عرب میں اس ملک کے سب سے چھوٹے سیاسی قیدی ،العوامیہ علاقہ سے تعلق رکھنے والے اٹھارہ سالہ نوجوان کو آٹھ سال قید اور آٹھ سال کی سفری پابندی کی سزا سنانے کا اعلان کیا گیا ہے۔

ولایت پورٹل:العربی الجدید بین الاقوامی نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق سعودی خصوصی فوجداری عدالت نے ملک کے سب سے کم عمر قیدی مرتضی قریریص کے بارے میں حتمی فیصلہ جاری کرتے ہوئے اس کو آٹھ سال قید اور آٹھ سال کی سفری پابندی کی سزا سنانے کا اعلان کیا گیا ہے۔

تاہم سوشل میڈیا کے مختلف حلقوں میں اس فیصلہ کو غیر منصفانہ قرار دیتے ہوئے بڑے پیمانہ پر تنقید کا نشانہ بنایا گیا ہے۔

یادرہے کہ مرتضی کا جرم یہ تھا کہ اس نے 20111 میں دیگر تیس بچوں کے ساتھ حکومتی پالیسیوں کے خلاف سائیکل مارچ کیا تھا جس کے بعد اس کو اپنے والدین کے ساتھ بحرین جاتے ہوئے گرفتار کرلیا گیا۔

مرتضی کو چار سال جیل میں رکھا گیا اور جب اس کی عمر اٹھارہ سال کی ہوئی تو اس کے اوپر فرد جرم عائد کی گئی جس میں اس کے خلاف انتہاپسند جماعتوں کے ساتھ رابطہ،حکومت کے خلاف مظاہرے اور العوامیہ پولیس پر حملہ کرنے جیسے الزامات عائد کیے گئے ہیں۔

انسانی حقوق کی یورپی تنظیموں نے اس سے قبل کہا تھا کہ مرتضی کوکال کوٹھری میں رکھا گیا ہے اور اعتراف کرنے کے لیے اس پر طرح طرح کے حربے استعمال کیے جارہے ہیں ۔

0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम