سعودی عرب میں جی 20 سربراہی اجلاس کا بائیکاٹ کرنے کے لئے عالمی سطح پر مہم کا آغاز

انسانی حقوق کے کارکنوں اور سعودی جیلوں میں قید سیاسی قیدیوں کے اہل خانہ نے جی 20 سربراہی اجلاس کے بائیکاٹ کا مطالبہ کیا ہے۔

ولایت پورٹل:القدس العربی اخبار کی رپورٹ کے مطابق سعودی عرب میں انسانی حقوق کے کارکنوں اور سیاسی قیدیوں کے اہل خانہ نے ریاض میں جی 20 سربراہی اجلاس کا بائیکاٹ کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔
رپورٹ کے مطابق یہ مہم برطانیہ میں عرب انسانی حقوق کی تنظیم اور سعودی عرب میں سیاسی قیدیوں کے متعدد اہلخانہ نے ریاض میں ہونے والے جی 20 سربراہی اجلاس کا بائیکاٹ کرنے کے لئے شروع کی ہے۔
سعودی عرب میں ہونے والی جی 20 کانفرانس کی مخالف تحریک نے "ریاض میں شرم کانفرنس" کے عنوان سے ایک بیان جاری کیا جس میں کہا گیا ہے کہ سعودی حکام کے ذریعہ انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں سے نمٹنے کے لئے یہ تحریک تشکیل دی گئی ہے۔
اس مہم کی حمایت کرنے والوں  کاکہنا ہے کہ اس کانفرانس کا کیا مطلب ہے جبکہ سعودی حکومت دانشوروں ،سماجی کارکنان اور دینی علما کی وسیع پیمانہ کر گرفتاریاں جاری رکھے ہوئے ہے، بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ کانفرانس ایسے وقت میں ہورہی ہے جبکہ ریاض یمن کے خلاف اپنی جنگ اور سعودی کارکنوں کی نظربندی جاری رکھے ہوئے ہے۔
واضح رہے کہ جی 20 سربراہی اجلاس 21 اور 22 نومبر  کو سعودی عرب کے زیر اہتمام ویڈیو کانفرنس میں ہونا ہے۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین